site
stats
عالمی خبریں

امریکہ کواپنی’ون چائنا‘پالیسی پرنظرِثانی کرناچاہیے،ٹرمپ

واشنگٹن :امریکہ کےنومنتخب صدرڈونلڈ ٹرمپ کاکہنا ہےکہ امریکہ کو اپنی’ون چائنا‘ پالیسی پرنظرِ ثانی کرناچاہیے۔

تفصیلات کےمطابق تفصیلات کےمطابق امریکہ کےنومنتخب صدرڈونلڈ ٹرمپ نے منصب سنبھالنے سے پہلے ہی پالیسیاں تبدیل کرنے کا اشارہ دے دیا۔

ڈونلڈ ٹرمپ نےایک بار پھرچین کو آڑے ہاتھوں لیتےہوئےکہا کہ امریکہ کو اپنی’ون چائنا‘پالیسی پر نظرِ ثانی کرنا چاہیے۔

نجی چینل کوانٹر ویودیتے ہوئےڈونلڈ ٹرمپ کا کہناتھاکہ تجارت اوردیگر معاملات میں چین کی جانب سےرعایت کے بغیر اس پالیسی کو برقرار رکھنے کی انہیں کوئی وجہ نہیں نظر آتی۔

خیال رہے کہ امریکہ نے 1979 میں تائیوان سے سفارتی تعلقات توڑ دیے تھےاور اس کے بعد سے وہ چین کے اس موقف کا احترام کرتا چلا آیا ہے کہ تائیوان چین کا الگ ہو جانے والا صوبہ ہے۔

چین تائیوان کو اپنا صوبہ قرار دیتا ہے اور اس کی آزاد ریاست کی حیثیت سے پہچان کا باعث بننے والی کسی بھی چیز سے اجنتاب چین کی خارجہ پالیسی کی ترجیحات میں شامل ہے۔

نومنتخب امریکی صدرڈونلڈ ٹرمپ نے کہا ہے کہ کرنسی اور شمالی کوریا کے معاملات پر چین امریکہ کے ساتھ تعاون نہیں کر رہا۔

امریکی ٹی وی پر گفتگو میں ڈونلڈٹرمپ کاکہناتھاکہ انتخابات میں روسی مدد کا الزام مضحکہ خیز اوراحمقانہ ہے۔

واضح رہے کہ حال ہی میں امریکی نو منتخب صدر ٹرمپ نے تائیوان کی صدر سائی اینگ وین سے براہ راست بات بھی کی تھی جس کے بعد دونوں ممالک کے درمیان تناؤ میں اضافہ ہوا ہے۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top