روس: فیفا ورلڈ کپ کے نام پر انسانی اسمگلرز سرگرم ہوگئے: FIFA: WORLD CUP
The news is by your side.

Advertisement

روس: فیفا ورلڈ کپ کے نام پر انسانی اسمگلرز سرگرم ہوگئے

ماسکو: روس میں جاری فیفا ورلڈ کپ 2018 کے نام پر انسانی اسمگلرز سرگرم ہوگئے، ساٹھ نائجیرئن کو فروخت کر دیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق انسانی اسمگلرز نے روس میں جاری فیفا ورلڈ کپ دیکھنے اور بعد میں ملازمت فراہم کرنے کے جھوٹے دعوے کر کے تقریبا 60 نائجیرئن کو فروخت کر دیا۔

غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق روس میں مقیم 60 نائجیرئن اس وقت شدید پریشانی کی زندگی گزار رہے ہیں، کھانے پینے اور دیگر ضروری اشیا سے بھی محروم ہیں۔


بھارت : انسانی اسمگلنگ کے خلاف مہم چلانے والی 5 خواتین اجتماعی زیادتی کا شکار


روسی دارالحکومت ماسکو میں نائجیریا کے سفارت خانے کے باہر تقریباً ساٹھ افراد نے اپنی حکومت سے امداد اور وطن واپسی کے لیے دھرنا بھی دے رکھا ہے، ان کا مطالبہ ہے کہ ان کے وطن واپسی کے لیے اقدامات کیے جائیں۔

ان افراد کے مطابق انہیں انسانی اسمگلروں نے فٹ بال ورلڈ کپ کے دوران روس پہنچایا تھا، اور ان سے  پرآسائش زندگی گزارنے سمیت بہتر روزگار کے بھی جھوٹے وعدے کیے گئے تھے۔


ہسپانوی پولیس کی مراکش میں کارروائی، انسانی اسمگلنگ میں ملوث گروہ گرفتار


دوسری جانب انسانی اسمگلروں کے خلاف سرگرم ایک تنظیم کا کہنا ہے کہ ویزا پالیسی میں نقائص کی وجہ سے ان افراد کو انسانی اسمگلروں نے پیسے لے کر فروخت کیا ہے اور ان سے روس میں ملازمتیں دینے کا وعدہ بھی کیا گیا تھا۔

علاوہ ازیں نائجیریا کے روس میں سفارت خانے کی جانب سے جاری کردی بیان میں کہا گیا ہے کہ متاثرہ افراد کو خوراک فراہم کی جا رہی اور اُن کی واپسی کے امکانات کا جائزہ بھی لیا جا رہا ہے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں، مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں