The news is by your side.

Advertisement

نوازشریف کے دل کے ایک حصے میں خون کی ترسیل ٹھیک نہیں‘ ڈاکٹرعدنان

لاہور: سابق وزیراعظم کے ذاتی معالج ڈاکٹرعدنان نے کہا کہ نوازشریف کےعلاج کے لیے انتہائی احتیاط کی ضرورت ہے۔

تفصیلات کے مطابق نوازشریف کے ذاتی معالج ڈاکٹر عدنان کا کہنا ہے کہ رپورٹس کے مطابق نوازشریف کی بیماری سادہ نہیں ہے، ان کےعلاج کے لیے انتہائی احتیاط کی ضرورت ہے۔

ڈاکٹرعدنان نے کہا کہ رپورٹ کے بعد تعین کیا جاسکتا ہےعلاج یہاں یا بیرون ملک ہو، میڈیکل بورڈ کا کام تشخیص کرنا تھا،علاج حکومت نے طے کرنا ہے۔

انہوں نے کہا کہ نوازشریف کے دل کے ایک حصے میں خون کی ترسیل ٹھیک نہیں ہے، نوازشریف کو کسی دوسری جگہ منتقل کرنے کا فیصلہ بورڈ کرے گا۔

خیال رہے کہ گزشتہ ہفتے سابق وزیراعظم نوازشریف کے ذاتی معالج کی میڈیکل بورڈ میں شمولیت کی تجویز بورڈ سربراہ نے مسترد کردی تھی۔

میڈیکل بورڈ کے سربراہ ڈاکٹر عارف تجمل نے نوازشریف کے ذاتی معالج کو بورڈ میں شامل کرنے کی تجویر پر ردعمل دیتے ہوئے کہا تھا کہ غیرسرکاری معالج کو میڈیکل بورڈ میں شامل نہیں کیا جاسکتا، مریض چاہے تو ذاتی معالج سے تفصیلات شیئر کرسکتا ہے۔

واضح رہے نواز شریف کو العزیزیہ ریفرنس میں احتساب عدالت نے سات سال قید اور ساڑھے تین ارب روپے جرمانے کی سزا سنائی تھی، جس کے بعد ان کی درخواست پر اڈیالہ کے بجائے کوٹ لکھپت جیل منتقل کیا گیا تھا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں