The news is by your side.

Advertisement

ڈاکٹر عاصم کیلئے طویل ریمانڈ مانگنے کی ضرورت نہیں تھی، نثار کھوڑو

لاڑکانہ : وزیر اطلاعات سندھ نثار کھوڑو نے کہا ہے کہ ڈاکٹر عاصم حسین کیس میں شامل کئے گئے دیگر ناموں کے خلاف کارروائی کرنے والے کرسکتے ہیں۔

انہوں نے عاصم حسین کو بھی تین ماہ زیر حراست رکھا، انہوں نے کہا کہ 4 اور 14 دن کے ریمانڈ کی بحث مناسب نہیں تھی۔

کیا ڈاکٹر عاصم کو 3 ماہ حراست میں رکھنا کافی نہیں تھا؟ اس لئے طویل ریمانڈ مانگنے کی ضرورت نہیں تھی۔ لاڑکانہ میں یونین کمیٹی 8 کے نو منتخب چیئرمین کی جانب سے لگائے گئے فری میڈیکل کیمپ کا افتتاح کرنے کے بعد میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ صوبائی کابینہ میں نئے چہرے شامل کرنے کی بات نہیں، سارے چہرے اسمبلی میں موجود ہیں۔

صوبائی کابینہ میں رد و بدل ہوتی رہتی ہے، ابھی پارٹی کی جانب سے کئے گئے نئے فیصلوں کے اعلانات نہیں ہوئے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ اگر وفاقی حکومت کو کسانوں سے ہمدردی کی اہلیت دکھانی ہے تو وہ سندھ میں دھان کی فصل کی قیمتیں بڑھانے کے لئے سبسڈی کا اعلان کرے، اس میں حکومت سندھ بھی شامل ہوگی۔

اس موقع پر نثار کھوڑو نے طبی کیمپ کا تفصیلی دورہ بھی کیا۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں