The news is by your side.

Advertisement

ڈاکٹرعاصم حسین پرفالج کا حملہ، ملاقاتوں پرپابندی، مکمل آرام کا مشورہ

کراچی : پیپلز پارٹی کے رہنما ڈاکٹرعاصم حسین پرفالج کاحملہ ہوا ہے، طبی معائنے اورایم آرآئی کے بعد معالجوں نے انہیں مکمل آرام کامشورہ دے دیا۔

تفصیلات کے مطابق سندھ ہائرایجوکیشن کمیشن کے چیئرمین اور پاکستان پیپلزپارٹی کے رہنما ڈاکٹر عاصم حسین پر فالج کے حملے کے بعد ڈاکٹروں نے ان کا ایم آر آئی کیا ہے اور انہیں مکمل آرام کا مشورہ دیتے ہوئے اہل خانہ کے علاوہ ہر قسم کی ملاقات پر پابندی عائد کردی ہے۔

ڈاکٹروں نے ہنگامی بنیادوں پر ڈاکٹر عاصم کے مختلف ٹیسٹ بھی کیے ہیں، فالج حملہ ذہنی دباؤ کا نتیجہ قراردیاجارہا ہے، ڈاکٹر عاصم کے اہل خانہ اور ضیاء الدین اسپتال کے ترجمان نے عوام سے ڈاکٹر عاصم کی صحت یابی کیلئے دعا کی اپیل کی ہے۔

کئی ماہ سے جناح اسپتال میں علاج کے غرض سے داخل ڈاکٹرعاصم حسین کی اچانک طبیعت بگڑ گئی، جس کے بعد ماہر معالجین نے اُن کا معائنہ کرکے مختلف ٹیسٹ کروائے۔

یاد رہے کہ چند روز قبل ڈاکٹر عاصم حسین کو طبیعت خرابی کے باعث مقامی اسپتال لایا گیا تھا، واضح رہے ڈاکٹر عاصم سابق صدرآصف علی زرداری کے خاص دوست ہیں اور دور زرداری میں بطور وفاقی وزیر پیٹرولیم کے خدمات انجام دیتے رہے ہیں جب کہ گرفتاری کے وقت وہ ایچ ای سی کے سربراہ کے طور اپنے فرائض انجام دے رہے تھے۔

 ڈاکٹرعاصم اپنے اسپتال میں دہشت گردوں کے علاج معالجہ کروانے اور کرپشن کے الزامات میں زیر حراست ہیں جہاں اُن کی طبیعت بگڑ جانے کے باعث جناح اسپتال میں داخل کرادیا گیا تھا۔

ترجمان بلاول ہائوس نے کہا ہے کہ ذہنی دبائو کی وجہ سے ڈاکٹر عاصم پر قاتلانہ حملہ ہوا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں