site
stats
سندھ

ڈاکٹر عاصم امراضِ قلب کے انتہائی نگہداشت کے وارڈ منتقل

کراچی: دہشت گردوں کو علاج کی سہولت فراہم کرنے کے الزام میں اسیر پاکستان پیپلز پارٹی کے سابق وفاقی وزیر ڈاکٹر عاصم کو سینے میں درد کی شکایت کے باعث قومی ادارہ برائے امراضِ قلب میں داخل کردیا گیا جہاں ای سی جی کے درست نہ آنے پر انہیں آئی سی یو منتقل کردیا گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق سابق وفاقی وزیر ڈاکٹر عاصم کو آج سینے میں درد کی شکایت پر قومی ادارہ برائے امراضِ قلب منتقل کیا گیا ہے جہاں ان کا ماہر ڈاکٹرز کی ٹیم نے معائنہ کیا اور چند ضروری ٹیسٹ کرائے گئے جس کے بعد ماہر معالجین کی ہدایت پر انہیں انتہائی نگہداشت کے وارڈ میں منتقل کردیا گیا ہے۔

وزیر صحت سندھ ڈاکٹر سکندر میندھرو نے ڈاکٹر عاصم حسین کو فون کر کے خیریت دریافت کی علاوہ ازیں وزیر صحت نے ڈاکٹرز کی ٹیم سے بھی بات چیت کی اور ڈاکٹر عاصم کی صحت کے حوالے سے معلومات حاصل کیں۔

واضح رہے کہ ڈاکٹر عاصم حسین پہلے ہی کمر درد، بلند فشار خون اور ذیا بیطس کے امراض میں مبتلا ہیں جن کے علاج کے لیے عدالتی حکم کے تحت انہیں جناح اسپتال میں داخل کیا گیا تھا جہاں وہ دو ماہ سے زائد عرصے سے زیرِ علاج ہیں۔

یاد رہے کہ گزشتہ برس اگست میں ڈاکٹر عاصم حسین کو اس وقت گرفتار کیا گیا تھا جب وہ ہائر ایجوکیش کمیشن کے آفس میں ایک اہم میٹنگ کی صدارت کر رہے تھے انہیں دہشت گردوں کو علاج مہیا کرنے کے الزام میں گرفتار کیا گیا تھا جب کہ رواں سال اکتوبر میں فالج کے حملے کے باعث انہیں جناح اسپتال منتقل کردیا گیا تھا۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top