ڈاکٹرعاصم سے متعلق13صفحات پر مشتمل جے آئی ٹی کی رپورٹ بھی منظرعام پر آگئی -
The news is by your side.

Advertisement

ڈاکٹرعاصم سے متعلق13صفحات پر مشتمل جے آئی ٹی کی رپورٹ بھی منظرعام پر آگئی

کراچی : ڈاکٹرعاصم سے متعلق تیرہ صفحات پر مشتمل جے آئی ٹی کی رپورٹ بھی منظرعام پر آگئی ہے۔

ڈاکٹر عاصم کی جے آئی ٹی کے حوالے سے تہلکہ خیز انکشافات سامنے آگئے، اے آر وائی نیوز نے جے آئی ٹی کی کاپی حاصل کرلی ہے، تیرہ صفحات پر مشتمل رپورٹ میں آصف زرداری، ڈاکٹر زولفقار مرزا، مظفر ٹپی اور قادر پٹیل پر سنگین الزامات لگائے گئے ہیں۔

رپورٹ کے مطابق مزکورہ رہنماوں پر آصف علی زرداری کی ہدایت پر لیاری گینگ وار کے عزیر بلوچ، بابا لاڈلا گروپ کی سرپرستی کرنے اور ان کو غیر قانونی اسلحہ سپلائی کرنے کا الزام ہے مذکورہ افراد لیاری گینگ وار اور ایم کیو ایم کے ٹارگٹ کلرز کے درمیان مسلح تصادم کی سرپرستی بھی کرتے رہے۔

رپورٹ جے آئی ٹی میں ڈاکٹر عاصم حسین کے ماضی، قریبی سیاسی تعلاقات، کرمنل ریکارڈ، اور دہشت گردوں اور ٹارگٹ کلرز کے غیرقانونی علاج کی تفصیلات ہیں۔

رپورٹ میں الطاف حسین، فاروق ستار، حیدر عباس رضوی سمیت ایم کیو ایم کے کئی رہنماوں کا ٹارگٹ کلرز کی سرپرستی کے حوالے سے ذکر ہے، ڈاکٹر عاصم حسین القاعدہ اور لیاری گینگ وار کے دہشت گردوں کے علاج میں ملوث رہے ہیں۔

رپورٹ میں ڈاکٹر عاصم حسین پر لیند گریبنگ، منی لانڈرنگ، کرپشن اور اختیارات کے ناجائز استعمال کا الزام ہے، ڈاکٹر عاصم نے اختیارات کا ناجائز استعمال کرتے ہوئے چھتیس فاریکس کمپنیاں رجسٹر کرائیں، ان کمپنیوں کے زریعے سینکٹروں مشکوک ٹرانزیکشن کرائی گئیں۔

ڈاکٹرعاصم نے لیاری گینگ وار کے اور القاعدہ کے چھ دہشتگردوں کا اپنے ہسپتال میں علاج کرایا، جس کا ریکارڈ موجود ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں