ڈاکٹر عاصم حسین کو 19 ماہ بعد رہا کردیا گیا -
The news is by your side.

Advertisement

ڈاکٹر عاصم حسین کو 19 ماہ بعد رہا کردیا گیا

کراچی: سابق وزیر پیٹرولیم ڈاکٹر عاصم حسین کو 19 ماہ بعد رہا کردیا۔ رہائی کے بعد ڈاکٹر عاصم جناح اسپتال سے ضیا الدین اسپتال کلفٹن روانہ ہوگئے۔

تفصیلات کے مطابق سابق وزیر پیٹرولیم ڈاکٹر عاصم حسین کی 19 ماہ بعد رہائی عمل میں آگئی۔ وہ دہشت گردوں کا علاج کرنے اور اربوں روپے کی کرپشن کے الزام میں قید تھے۔

ڈاکٹر عاصم کے وکیل کے مطابق ان کی طبیعت خراب ہے اور ان کی حالت گھر جانے جیسی نہیں ہے، لہٰذا وہ جناح اسپتال سے ضیا الدین اسپتال کلفٹن روانہ ہوگئے ہیں۔

مزید پڑھیں: ڈاکٹر عاصم پیپلز پارٹی کراچی کے صدر مقرر

یاد رہے کہ ڈاکٹر عاصم کو ضمانت ملنے کے باوجود ان کا پاسپورٹ ہائیکورٹ میں جمع نہ ہونے پر ان کی رہائی کا معاملہ لٹک گیا تھا۔

ڈاکٹر عاصم کو اپنے پاسپورٹس جمع کروانے کی شرط کے ساتھ ضمانت ملی تھی تاہم ڈاکٹر عاصم کی جانب سے پاسپورٹ جمع کروانے کی شرط ختم کرنے کی درخواست کو گزشتہ روز جسٹس فاروق شاہ نے سننے سے انکار کردیا تھا۔

جسٹس فاروق کا کہنا تھا کہ انہوں نے ڈاکٹر عاصم کی ضمانت کے فیصلے کی مخالفت کی تھی۔ ضمانت جسٹس کریم خان آغا نے دی تھی، کیس ہم نہیں سن سکتے۔

تاہم آج صبح کراچی کی انسداد دہشت گردی عدالت نے ان کا پاسپورٹ واپس کرنے کی درخواست منظور کرلی۔ پاسپورٹ کو سندھ ہائیکورٹ میں جمع کروانے کے بعد عدالت نے ان کی رہائی کا حکم دے دیا۔

خیال رہے کہ 2 روز قبل سندھ ہائیکورٹ نے 479 ارب روپے کے کرپشن کیسز میں میڈیکل گراؤنڈ پر سابق وزیر برائے پیٹرولیم ڈاکٹرعاصم کی ضمانت منظور کرلی تھی۔

مزید پڑھیں: ڈاکٹر عاصم کی ضمانت منظور

عدالت نے ڈاکٹر عاصم حسین کو کرپشن کے 2 مقدمات میں 25، 25 لاکھ روپے کے مچلکے اور اپنے پاسپورٹ جمع کروانے کا حکم دیا تھا۔

ڈاکٹر عاصم کی ضمانت کی خبر ملنے کے بعد پیپلز پارٹی نے ان کے شاندار استقبال کا فیصلہ کیا تھا۔

پیپلز پارٹی ڈاکٹر عاصم پر دہشت گردوں کا علاج کرنے اور اربوں روپے کی کرپشن کے الزامات میں جیل میں ہونے کے باوجود انہیں پیپلز پارٹی کراچی کا صدر بھی مقرر کر چکی ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں