The news is by your side.

Advertisement

جسمانی ریمانڈ کے بعد ڈاکٹر عاصم کو نیب کے حوالے کرنے کا فیصلہ

کراچی : رینجرز کی زیر حراست سابق مشیر پیٹرولیم ڈاکٹرعاصم حسین و دیگر ملزمان کا جسمانی ریمانڈ ختم ہونے پر انہیں نیب کے حوالے کر دیا جا ئے گا۔

تفصیلات کے مطابق نیب سابق سینیٹر ڈاکٹر عاصم حسین پر رینجرز کے جسما نی ریما نڈ کے ختم ہو نے کے بعد شکنجہ کسنے کو تیار ہے، ڈاکٹر عاصم کیخلاف منی لانڈرنگ ،دہشتگردوں کی مالی معاونت اور کرپشن کے ثبوت مل گئے ۔

مزید پیشرفت کیلئے رینجرز اور نیب کی مشترکہ ٹیم تشکیل دیدی گئی ہے،ذرائع کے مطا بق رینجرز کی زیر حراست ڈاکٹرعاصم حسین و دیگر ملزمان کا جسمانی ریمانڈ ختم ہونے پر انہیں نیب کے حوالے کر دیا جا ئے گا۔ اس با ت کے امکا نات ہیں کہ نیب ملزمان کیخلاف ریفرنس احتساب عدالت میں دائر کریگا

ذرائع کا یہ بھی کہنا ہے کہ اس حوالے سے نیب اور رینجرز پر مشتمل جوائنٹ انویسٹی گیشن ٹیم تشکیل دیدی گئی ہے جو اختیارات کے ناجائز استعمال ، کرپشن، خرد برد ،لینڈ گریبنگ،چائنا کٹنگ ،غیرقانونی ٹھیکوں ، سی این جی سٹیشنز کے غیر قانونی لائسنس جاری کرنے ،پی ایم ڈی سی میں ذریعے بھاری رشوت کے ذریعے میڈیکل کالجوں کی رجسٹریشن،کے ڈی اے اور کے ایم سی سے اربوں روپے مالیت کے متعدد پلاٹ غیر قانونی طور پر حاصل کرنے ، ایس ایس جی سے ، پی ایس او ، اوگرا ، پی پی ایل ، اور وفاقی و سند ھ حکومت اور قومی خزانے کو اربوں روپے کا نقصان پہنچانے کے الزامات عائد کئے گئے ہیں۔

رپورٹ کے مطابق ڈاکٹر عاصم حسین نے کے ای ایس سی سے بھی بھاری رشوت لی اور اسے ناجائز رعایتیں دیکر خزانے کو اربوں روپے کا نقصان پہنچایا ساتھ ہی نیب اور رینجرز حکام نے ڈاکٹر عاصم حسین اور انکے ساتھیوں کے ملکی وغیر ملکی اثاثوں کی چھان بین شروع کردی ہے۔

شعیب وارثی ،ذوہیر صدیقی،کامران احسان ناجی کے بنک اکاﺅنٹس کی تفصیلات بھی لی گئی ہیں، نیب نے ڈاکٹر کیخلاف ریفرنس دائر کرنے کی تیاریاں شروع کر دی ہیں اس ضمن میں رینجرز اور نیب کی مشترکہ ٹیم کی تشکیل کے ساتھ ساتھ جسمانی ریمانڈ ختم ہونے پر انہیں تحویل میں لینے کا فیصلہ بھی کیا ہے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں