The news is by your side.

Advertisement

کراچی آپریشن سے جرائم میں نمایاں کمی آئی ہے، ڈاکٹرعشرت العباد

کراچی : گورنر سندھ ڈاکٹرعشرت العباد خان نے کہا ہے کہ کراچی میں جنگل کا قانون تھا، کراچی آپریشن سے جرائم میں نمایاں کمی آئی ہے۔ جبکہ ایم کیو ایم کے رہنما ڈاکٹر فاروق ستار کا کہنا ہے کہ ملک میں میرا سلطان ڈرامہ بند ہونا چاہئیے، کراچی آپریشن پر نہ وزیر اعلی کی مانیٹرنگ کمیٹی بنی نہ ہی شکایتی ازالہ کمیٹی نے کام کرنا شروع کیا۔

ان خیالا ت کا اظہار انہوں نے کراچی کے مقامی ہوٹل میں آزادی اظہار رائے کی مناسبت سے منعقدہ تقریب میں گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

گورنرسندھ کا کہنا تھا کہ ناراضگیاں اور غلط فہمیاں ہوتی ہیں لیکن جرائم پیشہ افراد کے خلاف آپریشن جاری رہے گا، ان کا کہنا تھا کہ کراچی آپریشن بلا تفریق کیا جارہا ہے۔

کراچی مستحکم ہوگا تو پاکستان مستحکم ہوگا۔ گورنر سندھ کا کہنا تھا کہ پانامہ لیکس آنے کے بعد را کے ایجنٹ کو سب بھول گئے۔

میڈیا کے مارننگ شوز دیکھو تو معلوم ہوتا ہے کہ پاکستان میں سب اچھا ہے اور ٹاک شوز سے یہ تاثر ملتا ہے کہ آج پاکستان کا وجود ختم ہوجائے گا۔

تقریب سے اظہار خیال کرتے ہوئے ڈاکٹر فاروق ستار کا کہنا تھا کہ سندھ میں میرا سلطان ڈرامے کے کردار خزینہ سلطان اور پنجاب میں سنبل آغا کی حکومت قائم ہے،نیشنل ایکشن پلان پر کوئی مانیٹرنگ کمیٹی نہیں بنائی گئی۔

ان کا کہنا تھا کہ آفتاب احمد کی ہلاکت جمہوری دور کے منہ پر طمانچہ ہے،ہر کسی کو بری خبر کی تلاش ہے، میں روز روز آفتاب احمد کہاں سے لاؤں۔

انہوں نے کہا کہ ایم کیو ایم کے ایک سو پنسٹھ کارکنان لاپتہ جبکہ ستاون کو ماورائے عدالت قتل کیا جاچکا ہے۔ ڈاکٹر فاروق ستار نے کہا کہ صوبہ سندھ میں گزشتہ آٹھ سال سے مردم شماری نہیں کروائی گئی،، اگر صیح مردم شماری ہوجائے تو شہری سندھ سے وزیر اعلیٰ منتخب ہوجائے گا۔

 

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں