The news is by your side.

Advertisement

ڈاکٹر ماہا کا خودکشی سے قبل کا ’وائس نوٹ‘ منظر عام پر آگیا

کراچی: شہر قائد کے علاقے گزری میں مبینہ طور پر خودکشی کرنے والی ڈاکٹر ماہا کا موت سے قبل وائس نوٹ منظر عام پر آگیا۔

اے آر وائی نیوز کی رپورٹ کے مطابق کراچی میں مبینہ طور پر خودکشی کرنے والی ڈاکٹر ماہا کا انتقال سے قبل وائس نوٹ سامنے آگیا، وائس نوٹ ڈاکٹر ماہا نے اپنی ایک دوست کو بھیجا تھا۔

ڈاکٹر ماہا نے وائس نوٹ میں کہا کہ جنید نے اتنی لڑائی کی کہ سمجھ نہیں آرہا تھا، لڑائی کے بعد میں نے نیند کی دوائی لی اور سو گئی تھی۔

متوفیہ نے دوست کو پیغام دیا کہ تم فاطمہ کو نہیں بتانا کہ میں جنید سے بات کرتی ہوں، فاطمہ کو کہا تھا کہ جنید سے میرا بہت پہلے ہی بریک اپ ہوگیا ہے۔

ڈاکٹر ماہا نے دوست کو مزید بتایا تھا کہ جنید نے زندگی عذاب کردی ہے، شدید ذہنی دباؤ ہے۔

مزید پڑھیں: ڈاکٹر ماہا خودکشی کیس کی تحقیقات، پولیس کا اہم فیصلہ

واضح رہے کہ چند روز قبل پوش علاقے ڈیفنس میں مبینہ خودکشی کرنے والی ڈاکٹر ماہا علی کی قبرکشائی اور میت کا پوسٹ مارٹم کرانےکا فیصلہ کیا گیا ہے۔

انویسٹی گیشن پولیس کے مطابق شواہد ملے ہیں کہ ڈاکٹر ماہا کو گولی سر میں سیدھے ہاتھ سےلگی، ایم ایل او نے پوسٹ مارٹم کےبغیر میڈیکل رپورٹ جاری کی تھی اور رپورٹ میں متوفیہ کوگولی الٹےہاتھ سےلگنےکا ذکر کیا گیا۔

پولیس کا کہنا ہے کہ میت کےپوسٹ مارٹم سےقانونی طور پر معاملہ کلیئر ہو جائےگا، ڈاکٹر ماہا کا پوسٹ مارٹم کرنےسےدرست میڈیکل رپورٹ بنےگی۔

Comments

یہ بھی پڑھیں