ڈاکٹرصغیراحمد کا ایک تعارف -
The news is by your side.

Advertisement

ڈاکٹرصغیراحمد کا ایک تعارف

کراچی : متحدہ قومی موومنٹ کے رہنما اورممبر صوبائی اسمبلی ڈاکٹر صغیر احمد جنہوں نے اپنے ضمیر کی آواز پر ایم کیو ایم کو خیرباد کہہ کر آج مصطفیٰ کمال اور انیس قائم خانی کا ہاتھ تھام لیا ہے۔

ڈاکٹر صغیراحمد متحدہ قومی موومنٹ کے ان سینیئر رہنماؤں میں شامل ہیں جن کو ایم کیو ایم کے قائد الطاف حسین کا بھرپوراعتماد حاصل رہا، اوروہ پارٹی سے 28 سال تک وابستہ رہے۔

ڈاکٹرصغیراحمد کا شمارکراچی کی بڑی سیاسی شخصیات میں ہوتا ہے۔ وہ ایم کیو ایم کے پہلے رکن اسمبلی ہیں جنہوں نے مصطفیٰ کمال کی وطن آمد کے بعد ان کا سساتھ دینے کا فیصلہ کیا۔

ڈاکٹرصغیراحمد 23 نومبر 1972 کو کراچی میں پیدا ہوئے انہوں اپنی ابتدائی تعلیم مقامی اسکول سے حاصل کی، ڈاکٹر صغیراحمد نے ڈاؤ میڈیکل کالج کراچی سے ایم بی بی ایس کیا جس کے بعد انہوں نے بائیو کیمسٹری میں ایم فل کیا۔

سال 2005 میں پہلی مرتبہ ایم کیو ایم کے پلیٹ فارم سے ضمنی انتخابات میں حصہ لیا اورکامیابی کے بعد سال 2007 تک سندھ کے وزیرماحولیات بھی رہے۔

اس کے علاوہ وہ تین مرتبہ سندھ اسمبلی کے رکن اور وزیر بھی رہے۔ ڈاکٹر صغیر دوسری مرتبہ 2008 سے 2013 تک صوبائی اسمبلی کے رکن رہے جب کہ 2013 کے انتخابات میں بھی وہ کراچی سے سندھ اسمبلی کے حلقہ پی ایس 117 سے 43 ہزار سے زائد ووٹ لے کرمنتخب ہوئے۔

2008 سے 2014 تک وہ وقتاً فوقتاً صوبائی وزیرصحت کے عہدے پر کام کرتے رہے۔

پی ایس -117 کن علاقوں ہر مشتمل ہے ؟

پی آئی بی کالونی، امین آباد، کلیٹن کوارٹرز، جمشید کوارٹرز، جہانگیر روڈ، مارٹن کوارٹرز، عثمانیہ مہاجر کالونی، پاکستان کوارٹرز، اسلام نگر، پیپلز کالونی، محمدی کالونی، مصطفی کالونی، پٹیل پاڑہ، گارڈن ایسٹ، سولجر بازار، پارسی کالونی، کیتھولک کالونی، وغیرہ۔

 

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں