The news is by your side.

Advertisement

بڑھتی آبادی قومی مسئلہ اورخطرہ بن کر ابھر رہا ہے ، ڈاکٹرثانیہ نشتر

قوم کو آبادی سے متعلق نظریات میں تبدیلی لانا ہوگی

اسلام آباد : معاون خصوصی ڈاکٹرثانیہ نشتر نے کہا بڑھتی آبادی سے قومی مسئلہ اورخطرہ بن کر ابھر رہا ہے، حکومت تنہا تمام مسائل سے نبردآزما نہیں ہوسکتی، قوم کو آبادی سے متعلق نظریات میں تبدیلی لانا ہوگی۔

تفصیلات کے مطابق معاون خصوصی ڈاکٹرثانیہ نشتر نے تقریب سےخطاب کرتے ہوئے کہا ملکی آبادی میں گزشتہ30سال میں دگنا سے زائد اضافہ ہوا، دنیاکےدیگرممالک میں آبادی60 سال میں دگناہوتی ہے، بڑھتی آبادی قومی مسئلہ اورخطرہ بن کر ابھر رہا ہے۔

ڈاکٹرثانیہ نشتر کا کہنا تھا آبادی میں تیزی سےاضافہ قابل تشویش اورقومی مسئلہ ہے، آبادی پر قابو پانے کےلیےصوبائی سطح پر اقدامات کی ضرورت ہے ، حکومت بنیادی سہولتوں کی فراہمی پرکام کررہی ہے۔

معاون خصوصی نے کہا مؤثر اور سنجیدہ اقدامات سے ملکی مسائل حل کیے جاسکتے ہیں، آبادی میں اضافے سے صحت وتعلیم کی سہولتوں کا فقدان ہے اور عوام کو سہولتوں کی فراہمی کیلئے نجی وسرکاری شراکت داری ناگزیر ہے۔

ان کا مزید کہنا تھا حکومت تنہاتمام مسائل سے نبردآزما نہیں ہوسکتی، قوم کو آبادی سے متعلق نظریات میں تبدیلی لانا ہوگی۔

خیال رہے دنیا بھر میں آبادی کا دن منایاجارہاہے، ماہرین کے مطابق ایشیا سب سے زیادہ تیزی سے بڑھنے والی آبادی کا مرکز ہے اور دنیا کی زیادہ آبادی اسی خطے میں آباد ہے۔

اس وقت دنیا کی آبادی پونے آٹھ ارب کے قریب ہے، آبادی میں اضافہ کی شرح یہی رہی تو بائیسویں صدی میں دنیا میں سانس لینے والے انسانوں کی تعداد ممکنہ طور پر گیارہ ارب سے تجاوز کر چکی ہوگی۔

آبادی کا دن منانے کا مقصدآبادی اور وسائل میں توازن کی اہمیت کو اُجاگر کرنا اور اس کے ساتھ عالمی سطح پر بڑھتی ہوئی آبادی اور کم ہوتے وسائل کی وجہ سے سامنے آنے والی مشکلات اور چیلنجز سے نمٹنے کیلئے لوگوں میں شعور اور آگاہی پیدا کرناہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں