The news is by your side.

Advertisement

کورونا کے علاج کیلئے کیا بہتر؟ ٹوسیلوزیماب انجکشن یا پلازمہ تھراپی

کراچی : ہیماٹالوجسٹ ڈاکٹر طاہر شمسی کا کہنا ہے کہ کورونا کے علاج کیلئے ٹوسیلوزیماب انجکشن کی نسبت پلازمہ تھراپی بہترہے ، ٹوسیلوزیماب انجکشن مہنگا اور اسکے سائیڈایفیکٹ بھی ہیں جبکہ پلازمہ کا صرف 1فیصدسائیڈایفیکٹ ہے۔

تفصیلات کے مطابق ہیماٹالوجسٹ ڈاکٹر طاہر شمسی نے اے آر وائی نیوزسےگفتگو کرتے ہوئے کہا کوروناکےعلاج کیلئےٹوسیلوزیماب انجکشن کی نسبت پلازمہ تھراپی بہترہے، ٹوسیلوزیماب انجکشن،تجرباتی دوائیں قوت مدافعت پراثراندازہوتی ہیں، ٹوسیلوزیماب انجکشن مہنگااور اسکے سائیڈایفیکٹ بھی ہیں.

ڈاکٹرطاہرشمسی کا کہنا تھا کہ پلازمہ تھراپی سے80فیصدسنجیدہ مریض صحت یاب ہورہےہیں، اس کاصرف 1فیصدسائیڈایفیکٹ ہےجس سےالرجی ہوتی ہے، پلازمہ تھراپی قدرت کابنایانظام ہےجس میں اینٹی باڈیزموجودہیں۔

ماہر امراض خون نے مزید کہا کہ پاکستان میں کوروناوائرس کے20لاکھ تک کیس جاسکتےہیں، کوروناوائرس کب تک رہےگاکچھ کہانہیں جاسکتا، ویکسین پر انحصارنہیں کیا جاسکتا کوئی پتہ نہیں کب مارکیٹ میں آئے۔

یاد رہے ڈاکٹر طاہر شمسی نے اپنے بیان میں کہا تھا کہ کورونا کوشکست دینے والے افراد ہر ہفتے اپناپلازمہ عطیہ کرسکتے ہیں، پلازمہ دینے والے شخص کو کسی قسم کا سائیڈ افیکٹ نہیں ہوسکتا ہے ،مزید بہتری آتی ہے۔

ڈاکٹر طاہر شمسی کا کہنا تھا کہ ملک بھرمیں ایک لاکھ سے زائد افراد کورونا کاشکار ہیں35 ہزارصحت یاب ہوچکے ہیں، کورونا کو شکست دینے والے شخص سے 9سو سے ایک ہزار ایم ایل پلازمہ نکالا جاتا ہے، فی الحال ابھی تک کسی بچے کو پلازمہ لگانے کی ضرورت نہیں پڑی۔

اس سے قبل ڈاکٹر طاہر شمسی نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا تھا بغیر ویکسین اور دوا کے وائرس کیخلاف جنگ لڑرہے ہیں، پلازمہ کے ذریعے لوگوں کی جانیں بچانےکی کوشش ہورہی ہے ، 200 سے زائد افراد کو پلازمہ لگایا جاچکا ہے۔

خیال رہے یونیورسٹی آف ہیلتھ سائنسز نے پلازمہ تھراپی سے علاج کو نقصان دہ قرار دیتے ہوئے کہا تھا کہ اپلازمہ تھراپی میں مریضوں کیلئےپیچیدگیاں پیداہوسکتی ہیں، اس کےنتیجےمیں مریض کا دل بند ہونے کا خطرہ ہوتا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں