The news is by your side.

Advertisement

اگرناگزیرہوا تو دھرنے میں خود شرکت کروں گا، ڈاکٹرطاہرالقادری

اسلام آباد : پاکستان عوامی تحریک کے سربراہ ڈاکٹر طاہر القادری نے کہا ہے کہ ہم نے فیصلہ کیا ہے کہ پاکستان عوامی تحریک کے کارکنان اسلام آباد دھرنے میں شرکت کریں گے۔ اگر ناگزیر ہوا تو میں خود بھی پاکستان آجاؤں گا، حکمرانوں نے جسٹس باقر کی رپورٹ جاری نہیں ہونے دی، آج بادشاہت کا بدترین مظاہرہ کیا گیا۔

ان خیالات کا اظہارانہوں نے اے آر وائی کے پروگرام آف دی ریکارڈ میں میزبان کاشف عباسی سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ ڈاکٹرطاہرالقادری نے کہا کہ موجودہ حکومت جمہوریت اور سیاسی آزادی پر یقین نہیں رکھتی۔

شریف برادران آئین پاکستان پر بھی یقین نہیں رکھتے، لوگ سڑکوں پر نکلتے ہیں تو انہیں روک لیا جاتا ہے، حکومت اوچھے ہتھکنڈوں پر اتر آئی ہے۔

انہوں نے کہا کہ میں نے کارکنان کو ہدایات جاری کردی ہیں کہ وہ اسلام آباد دھرنے میں شرکت کریں، ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ اگر ناگزیر ہوا تو میں خود بھی دھرنے میں شرکت کروں گا۔

ان کا کہنا تھا کہ ہم پی ٹی آئی کے ان کارکنان کے ساتھ ہیں جو احتساب کے مطالبے کو پورا کرنے اپنے گھروں سے نکلے ہیں، انہوں نے ایک بار پھر مطالبہ کیا کہ شریف برادران خود کو احتساب کے لیے پیش کردیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں