site
stats
پاکستان

وزیراعظم خاندانی مفاد میں اداروں کی’ شریفائزیشن‘ کر رہے ہیں، طاہر القادری

اسلام آباد : سربراہ پاکستان عوامی تحریک ڈاکٹر طاہر القادری کا کہنا ہے کہ ریگولیٹری اداروں کی ’’شریفائزیشن‘‘ دراصل ’’سلطنتِ شریفیہ‘‘ کے قیام کی طرف عملی قدم ہے۔

وفاقی حکومت کی جانب سے 5 ریگولیٹری اتھارٹیز کو متعلقہ وزارتوں کے ماتحت کرنے کے فیصلے پر ردعمل دیتے ہوئے ڈاکٹر طاہر القادری نے کہا کہ پاناما لیکس کیس سے عوامی توجہ ہٹانے کے لیے غیر مناسب اور متنازعہ اقدامات کر رہے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ اس فیصلے کے ذریعےشریف خاندان اپنی سلطنتِ شریفیہ کو طول اور تقویت دینے کے لیے 5 خود مختار ریگولیٹری اتھارٹیز کی شریفائزیشن کر رہا ہے جو کہ قوم کے ساتھ ایک مذاق ہے۔

سربراہ پاکستان عوامی تحریک نے کہا کہ شریف خاندان کی جانب سے پاناما لیکس کے مردے کو بےکفن دفن کرنے کے لیے ہر روز نیا شوشا چھوڑا جارہا ہے لیکن عوام اس کیس کو کبھی ختم نہیں ہونے دیں گے۔

ڈاکٹر طاہر القادری نےکہا کہ عدالتی رپورٹس کے نام پر دھول اڑائی جارہی ہے جس کا مقصد اصل ایشوز سے توجہ ہٹانا اور اپنی حکومت کو طول دینا ہے،اپنی کرپشن کو چھپانے کے لیے جمہوریت کو بہ طور ڈھال استعمال کیا جا رہا ہے۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ اقتصادی ترقی کے دعوے جھوٹے ہیں اور پارلیمنٹ اب صرف سینہ کوبی کے لیے رہ گئی ہے، ملک میں انصاف نام کو نہیں ہے یہی وجہ ہے کہ 2016 میں پنجاب کی صوبائی حکومت کی جانب سے ماٍڈل ٹاؤن میں کیے گئے قتل عام پر اب تک شہدائے ماڈل ٹاؤن کے ورثاء کو انصاف نہیں ملا۔

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top