The news is by your side.

Advertisement

ڈرون کیمرے نے پتنگ بازوں کے لیے آج کا دن درد ناک بنا دیا

راولپنڈی: ڈرون کیمرے نے پتنگ بازوں کے لیے آج کا دن دردناک بنا دیا، ایک ہی دن ڈیڑھ سو کے قریب پتنگ باز سلاخوں کے پیچھے پہنچا دیے۔

اے آر وائی نیوز کے مطابق راولپنڈی میں جب ڈرون کیمرہ پتنگ بازوں اور ہوائی فائرنگ کرنے والوں کو ڈھونڈھنے نکلا تو ایک دن میں 145 ملزمان کو گرفتار کرا دیا، گزشتہ روز تھانہ ایئر پورٹ کے علاقے رحیم آباد پل کے قریب ایک بد قسمت موٹر سائیکل سوار پتنگ کی ڈور پھرنے سے زخمی ہو گیا تھا، جس پر مقامی پولیس اور ریسکیو ٹیمیں موقع پر پہنچ گئی تھیں۔

سی پی او عمر سعید ملک کی ہدایات کے مطابق راولپنڈی پولیس نے پتنگ بازی اور ہوائی فائرنگ کے خلاف بھرپور کریک ڈاؤن کیا، ڈرون کیمرے کی مدد سے پتنگ بازی اور ہوائی فائرنگ میں ملوث افراد کی نشان دہی کر کے گرفتار کیا گیا، ملزمان کی نشان دہی کے لیے بلند عمارتوں پر خصوصی اہل کار تعینات کیے گئے، اور گزشتہ رات سے اب تک کریک ڈاؤن کے دوران 145 ملزمان کو گرفتار کیا جا چکا ہے۔

ایس ایس پی آپریشنز وسیم ریاض کی سربراہی میں ڈویژنل ایس پیز اور ڈی ایس پیز کریک ڈاؤن کی خود نگرانی کر رہے ہیں، مساجد سے اعلانات کے ساتھ سوشل میڈیا کے ذریعے بھی پتنگ بازی اور ہوائ فائرنگ کی روک تھام کے لیے آگاہی دی جا رہی ہے، جب کہ مجموعی طور پر 1600 سے زائد افسران و اہل کار کریک ڈاؤن میں مصروف ہیں۔

حکام کے مطابق پتنگ بازی کے خلاف کریک ڈاؤن کے دوران اب تک 746 افراد کو گرفتار کر کے ایک لاکھ سے زائد پتنگیں اور ڈور برآمد کی جا چکی ہیں، ایس ایس پی آپریشنز نے واضح کر دیا ہے کہ شہر میں پتنگ بازی اور ہوائی فائرنگ کو کسی صورت برداشت نہیں کیا جائے گا۔

سی پی او عمر سعید ملک نے پتنگ بازی اور ہوائی فائرنگ کے خلاف کریک ڈاؤن کے جائز ے کے لیے دورہ بھی کیا، انھوں نے خود ڈرون اور دوربین کی مدد سے بلند عمارتوں کی چھتوں سے مانیٹرنگ کی، انھوں نے کہا اب ملزمان کو قانون کے کٹہرے میں کھڑا کریں گے، شہری بھی پتنگ بازی اور ہوائی فائرنگ جیسے خطرناک کاموں سے اجتناب اور حوصلہ شکنی کریں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں