The news is by your side.

Advertisement

جاپان میں مردے سجانے کا انوکھا مقابلہ’ 23 سالہ خاتون گورکن فاتح قرار

ٹوکیو: جاپان میں جنازے کی تدفین سے قبل مُردے کو خوبصورت بنا کر پیش کرنے کا ملک گیر مقابلہ 23 سالہ خاتون گورکن رینو تیرائی نے اپنے نام کرلیا۔

تفصیلات کے مطابق جاپان میں ہونے والے اس انوکھے مقابلے میں سیکڑوں گورکن خواتین نے اپنے فن کا مظاہرہ کیا اور زندہ لوگوں کو مردے کی طرح تیار کر کے بہترین انداز میں پیش کیا۔

مقابلے کی خصوصیت یہ ہے کہ چار رکنی ججز پر مشتمل پینل بہترین انداز میں مردہ تیار کرنے والے ایک فرد کو فاتح قرار دیتا ہے جس کے بعد اُسے یہ اعزاز دیا جاتا ہے۔

رواں برس منعقد ہونے والے انوکھے مقابلے میں سیکڑوں خواتین گورکن نے اپنے فن کا مظاہرہ کیا تاہم  یہ مقابلہ 23 سالہ رینو تیرائی نے اپنے نام کیا، اس سال منعقد ہونے والے مقابلے میں ججز اور شرکاء نے فاتح کا انتخاب کیا۔

ملک گیر مقابلے کا سہرا اپنے سر باندھنے والی خاتون گورکن رینو تیرائی  نے کہا کہ ’’میں نے مقابلے کے لیے بہت تیاری کی اور ہر طرح سے ویڈیو بنا کر مشاہدہ کیا کہ میرا عمل اچھا دکھائی دے رہا ہے یا نہیں، مقابلہ جیتنے کی اصل وجہ یہ ہے کہ میں لاش کے ساتھ نرمی اور احترام کا رویہ رکھتی ہوں‘۔

واضح رہے کہ جاپان کے شنتو مذہب سے وابستہ افراد کا ماننا ہے کہ کسی بھی شخص کے مرتے ہی اُس کا جسم ناپاک ہوجاتا ہے اور اُس کی تیاری قریبی رشتے داروں کی موجودگی میں کی جاتی ہے تاکہ مُردے کے گناہ دھل سکیں۔

ویڈیو دیکھیں

 


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں