The news is by your side.

Advertisement

کراچی سے ٹک ٹاکر لڑکی کے اغوا کے معاملے کا ڈراپ سین ہوگیا

کراچی : :سچل کےعلاقے سے ٹک ٹاکر لڑکی کے اغوا کے معاملے کا ڈراپ سین ہوگیا ، ٹک ٹاکر کا کہنا ہے کہ مجھے کسی نے اغوانہیں کیا، اپنی مرضی سے گئی تھی۔

تفصیلات کے مطابق ملیر کورٹ میں سچل کے علاقے سے ٹک ٹاکر لڑکی کے اغوا کے معاملے پر سماعت ہوئی ، ٹک ٹاکر 16سالہ ہدیٰ بتول نےعدالت میں اپنا بیان ریکارڈکروایا۔

تفتیشی افسر نے بتایا کہ لڑکی نے بیان دیا کہ اس کو کسی نےاغوانہیں کیا، وہ ٹک ٹاکرہدیٰ بتول مبین کے ساتھ اپنی مرضی سےگئی تھی، والد نے غلط فہمی کی بنا پر مقدمہ درج کروایا۔

لڑکی کے بیان کے بعدعدالت نے ٹک ٹاکرمبین کے خلاف اغوا کا مقدمہ خارج کرنے کا حکم دے دیا۔

تفتیشی افسر کا کہنا تھا کہ ٹک ٹاکرہدیٰ بتول کےاغواکامقدمہ سچل تھانےمیں درج تھا، جس کے بعد پولیس نے ہدیٰ بتول کو کورنگی قیوم آباد سے بازیاب کروایا تھا۔

افسر کے مطابق پولیس نے اغوا کے مقدمےمیں مبین نامی ٹک ٹاکرکو گرفتارکیا تھا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں