The news is by your side.

کینیا: خشک سالی سے 40 نایاب زیبرے ہلاک، ہاتھی بھی دم توڑ رہے ہیں

نیروبی: کینیا میں خشک سالی سے 40 نایاب زیبرے ہلاک ہو چکے ہیں، ہاتھی بھی بڑی تعداد میں دم توڑ رہے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق کینیا میں خشک سالی جنگلی حیات پر بھاری پڑنے لگی، چار دہائیوں میں ہونے والی بدترین خشک سالی نے تین مہینوں میں دنیا کے نایاب زیبرے کے تقریباً 2 فی صد مار دیے، اسی عرصے کے دوران معمول سے 25 گنا زیادہ ہاتھی مارے گئے ہیں۔

خشک سالی سے کینیا کی مشہور وائلڈ لائف خوراک کے ذرائع سے محروم ہو رہی ہے، جس کے سبب جانوروں کو اپنے علاقوں سے نکلنا پڑ رہا ہے اور اس طرح انسانوں کے ساتھ ان کا مہلک آمنا سامنا ہو رہا ہے، زیبرے اور ہاتھ پانی اور خوراک کی تلاش میں انسانی قصبوں اور دیہات کے کناروں تک پہنچ جاتے ہیں۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ اگر جنگلی حیات کو بچانے کے لیے اقدامات نہیں کیے گئے، اور بارشیں نہ ہوئیں تو مشرقی افریقی ملک کے بہت سے حصوں میں جانوروں کو وجودی بحران کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔

ماہرین کے مطابق گریوی کا زیبرا، عام میدانی زیبرے سے بڑا جانور ہے، اس کے جسم پر دھاریاں زیادہ قریب ہوتی ہیں، اور اس کے کان چوڑے ہوتے ہیں، یہ انواع میں سب سے نایاب ہیں، دنیا میں یہ صرف 3 ہزار باقی بچے ہیں، جن میں سے ڈھائی ہزار کینیا میں ہیں۔

جون سے لے کر اب تک خشک سالی سے تقریباً 40 گریوی ہلاک ہو چکے ہیں، یہ اندازہ کیا جا سکتا ہے کہ پورے سال میں کتنے زیبرا مرے ہوں گے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں