The news is by your side.

Advertisement

شہبازشریف کی طبیعت ناساز، جلسے منسوخ، سیاسی سرگرمیاں‌ معطل

لاہور: مسلم لیگ ن کے نومنتخب صدر اور وزیراعلیٰ پنجاب شہبازشریف کو طبیعت ناسازی کے باعث ڈاکٹرز نے مکمل آرام کا مشورہ دے دیا جس کے باعث انہوں نے تمام سیاسی سرگرمیاں معطل کردیں۔

تفصیلات کے مطابق نوازشریف کی پارٹی صدارت کے خلاف آنے والے عدالتی فیصلے کے بعد 27 فروری کو مسلم لیگ ن کے بلامقابلہ صدر منتخب ہونے والے شہباز شریف کی اچانک طبیعت ناساز ہوگئی۔

وزیراعلیٰ پنجاب کے ترجمان کا کہنا ہے کہ ڈاکٹرز کی ہدایت پر عمل کرتے ہوئے شہبازشریف نے تمام تر سیاسی مصروفیات ترک کردیں اسی باعث کل دیپالپور میں مسلم لیگ ن کا ہونے والا جلسہ بھی منسوخ کردیا گیا۔

ذرائع کے  مطابق نومنتخب صدر کو گزشتہ تین روز سے کمر اور گردن میں درد کی شکایت تھی جس پر انہوں نے ڈاکٹرز سے رجوع کیا، ابتدائی رپورٹس آنے کے بعد ڈاکٹرز نے انہیں مکمل آرام کا مشورہ دیتے ہوئے تمام تر سیاسی مصرفیات ترک کرنے کا مشورہ دیا۔

مزید پڑھیں: شہبازشریف مسلم لیگ(ن) کے بلامقابلہ قائم مقام صدر منتخب

مسلم لیگ ن کے ذرائع کا کہنا ہے کہ وزیراعلیٰ پنجاب ایک ہفتے آرام کے بعد اپنی سیاسی مصروفیات کا دوبارہ آغاز کریں گے جبکہ اس دوران وہ سرکاری امور گھر سے بیٹھ کر انجام دیتے رہیں گے۔

خیال رہے کہ گزشتہ ‌‌‌ہفتے سپریم کورٹ نے نوازشریف کو پارٹی صدارت کے لیے نااہل قرار دیتے ہوئے انتخابی اصلاحات 2017 کے کیس کا فیصلہ سنایا تھا جس میں کہا گیا تھا کہ آئین کی دفعہ 62،63 پر پورا نہ اترنے والا نا اہل شخص کسی سیاسی جماعت کی صدارت نہیں‌ کرسکتا۔

سپریم کورٹ آف پاکستان کے فیصلے کے نتیجے میں نوازشریف مسلم لیگ ن کی صدارات کے لیے نا اہل ہوگئے ہیں، انہیں پاناما کیس میں آئین کی دفعہ 62،63 کے تحت نا اہل قراردیا گیا تھا۔

واضح رہے کہ سپریم کورٹ کی جانب سے فیصلہ آنے کے بعد 27 فروری کو مسلم لیگ ن کی مرکزی مجلس عاملہ کے اجلاس میں نوازشریف نے شہباز شریف کو نیا پارٹی صدر بنانے کا اعلان کیا تھا۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں