The news is by your side.

Advertisement

ادویات کی غیرقانونی تشہیر کے خلاف ڈرگ ریگولیٹری اتھارٹی کا ایکشن کا فیصلہ

اسلام آباد: ادویات کی غیرقانونی تشہیر کے خلاف ڈرگ ریگولیٹری اتھارٹی نے ایکشن لینے کا فیصلہ کرلیا۔

تفصیلات کے مطابق ترجمان ڈریپ کا کہنا ہے کہ ڈرگ ایکٹ کے تحت ادویات کی بلا اجازت تشہیر جرم ہے، ادویات کی غیرقانونی تشہیر کرنے والی کمپنیوں کے خلاف کارروائی ہوگی۔

ترجمان ڈریپ کے مطابق ڈرگ ریگولیٹری اتھارٹی نے صوبائی دفتر کو مراسلہ جاری کردیا ہے، غیرقانونی ادویہ کی تشہیر کرنے والے ڈاکٹرز کے خلاف بھی کارروائی ہوگی۔

ترجمان ڈریپ کا کہنا ہے کہ ادویہ کی غیرقانونی تشہیر سے معاشرے میں سنگین مسائل جنم لے رہے ہیں، معاشرے میں ادویہ کے ازخود استعمال کی عادت فروغ پارہی ہے۔

مزید پڑھیں: ادویات کی قیمتوں میں اضافہ کرنے والی کمپنیوں کیخلاف کریک ڈاؤن کا آغاز

سی ای او ڈرگ ریگولیٹری اتھارٹی نے کہا کہ اشتہارات میں استعمال شدہ مواد شہریوں میں خوف کو جنم دیتا ہے، ڈرگ ایکٹ 1976، ڈریپ ایکٹ 2012 کے تحت کارروائیاں کی جائیں گی۔

واضح رہے کہ رواں سال اپریل میں ڈرگ ریگولیٹری اتھارٹی نے ملک بھر میں آپریشن شروع کیا تھا جس کے تحت غیرقانونی قیمتوں میں اضافہ کرنے والی دوا ساز کمپنیوں کے خلاف کارروائی کی گئی تھی۔

ادویات کے غیرقانونی اضافے پر دوا ساز کمپنیوں کے خلاف قانونی کارروائی اور بھاری جرمانے عائد کیے گئے تھے۔

وفاقی وزیر صحت کا کہنا تھا کہ خلاف ورزی کرنے والوں کے ساتھ آہنی ہاتھوں سے نمٹا جائے گا، عوام کو معیاری اور مناسب قیمت پر دواؤں کی فراہمی ممکن بنائیں گے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں