The news is by your side.

Advertisement

معاشرے کو منشیات سے بچانے کیلیے اسمگلنگ کی روک تھام ضروری ہے، ڈاکٹرعارف علوی

اسلام آباد : صدر ڈاکٹر عارف علوی نے کہا ہے کہ منشیات معاشرے کو تباہ کر دیتی ہے، اس سے لوگوں بچانے کا بہترین طریقہ اس کی اسمگلنگ روکنا ہے۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے دنیا بھر میں منشیات اور منی لانڈرنگ کے مجرموں کے ڈیٹابیس سے متعلق مصنوعی ذہانت کے مقامی طور پر تیارکردہ منصوبے امان کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔

صدر ڈاکٹر عارف علوی نے کہا کہ حکومت منشیات کی روک تھام کے لئے انقلابی اقدام کر رہی ہے۔ دنیا میں منشیات کی مہلک ترین اقسام بنائی جا رہی ہیں اور اس لعنت کے باعث ہلاکتوں میں تیزی سے اضافہ ہو رہا ہے، لہذا اس کے تدارک کے لئے مربوط کاوشیں درکار ہیں۔

انہوں نے کہا کہ افغان جنگ کے بعد بڑے پیمانے پر افغان مہاجرین کی پاکستان آمد سے ملک میں منشیات کی سمگلنگ میں اضافہ ہوا۔ منشیات صرف پاکستان کا نہیں بلکہ پوری دنیا کا مسئلہ ہے۔

مغربی ممالک میں منشیات کاشت نہیں کی جاتیں تاہم سنتھیٹک ڈرگز کی پیداوار کے باعث ان ممالک میں منشیات کا استعمال بہت تیزی سے بڑھ رہا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ملک میں منشیات کی سمگلنگ کی روک تھام کے لئے قوانین موجود ہیں لیکن ان پر عملدرآمد محدود کیا جاتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ لوگ ڈپریشن اور نفسیاتی مسائل کا شکار ہونے کے باعث منشیات کی طرف راغب ہوتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ منشیات کی سمگلنگ کی روک تھام کے ساتھ ساتھ اس کے علاج پر بھی توجہ دینے کی ضرورت ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں