The news is by your side.

Advertisement

دعا منگی اغوا کیس، زخمی حارث کا ابتدائی بیان ریکارڈ

کراچی: شہر قائد کے علاقے ڈیفنس سے اغوا ہونے والی لڑکی دعا منگی کے کیس میں زخمی ہونے والے حارث کا ابتدائی بیان ریکارڈ کرلیا گیا۔

نمائندہ اے آر وائی نیوز کے مطابق کراچی کے علاقے ڈیفنس سے اغوا ہونے والی 20 سالہ دعا مانگی کو پولیس تاحال بازیاب نہیں کراسکی ہے تاہم دعا منگی کو بچانے کی کوشش کرنے والے زخمی حارث کا ابتدائی بیان ریکارڈ کرلیا گیا۔

تفتیشی ذرائع کا کہنا ہے کہ زخمی حارث نے سی سی ٹی وی فوٹیج میں گاڑی کو شناخت کرلیا ہے۔

تفتیش کاروں نے حارث سے تحریری سوال کیا کہ اغوا کاروں کی تعداد کتنی تھی جس پر حارث سے پولیس کو بتایا کہ ملزمان کی تعداد 4 سے 5 تھی۔

مزید پڑھیں: دعامنگی کوتمام ترٹیکنالوجی بروئے کار لا کر بازیاب کروایا جائے گا، وزیراعلیٰ سندھ

واضح رہے کہ 6 روز قبل کراچی کے علاقے ڈیفنس میں ملزمان نے حارث کو فائرنگ کرکے زخمی کردیا تھا اور دعا منگی کو اغوا کرکے فرار ہوگئے تھے۔

یاد رہے کہ ویٹر نے انکشاف کیا تھا کہ حارث اوردعاکےساتھ اکثرایک خاتون بھی ہوتی تھی۔ بیان کے مطابق حارث اوردعا 4 ماہ سےمستقل ٹی شاپ آرہےتھے اور عرصے کے دوران کوئی بھی ناخوشگوارواقعہ پیش نہیں آیا ، دعامنگی اورحارث ہمیشہ اچھےاخلاق سےپیش آتےتھے۔

خیال رہے کہ چند روز قبل وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے کہا تھا کہ دعا منگی کو تمام تر ٹیکنالوجی بروئے کار لاکر بازیاب کرایا جائے گا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں