The news is by your side.

Advertisement

دعازہرا کیس، سپریم کورٹ نے والد کی درخواست منظور کر لی

سپریم کورٹ نے دعا زہرا کیس میں سندھ ہائیکورٹ کے فیصلے کےخلاف والد کی فوری سماعت کی درخواست منظور کر لی۔

سپریم کورٹ کا 3 رکنی بینچ جمعرات کودرخواست کی سماعت کرے گا۔ سندھ ہائیکورٹ فیصلےکو دعازہرا کے والد نےسپریم کورٹ میں چیلنج کیا تھا۔

درخواست میں مؤقف اختیار کیا گیا کہ سندھ ہائی کورٹ نے 8 جون کو دعا زہرا کو اس کی مرضی سے فیصلہ کرنے کا حکم دیا تھا، دعا زہرا کے بیان اور میڈیکل ٹیسٹ کی بنیاد پرفیصلہ سنادیا ہے۔

دعا زہرا کے والد کا کہنا تھا کہ میڈیکل رپورٹ میں دعازہراکی عمر17سال بتائی گئی ہے تاہم نادرا ریکارڈ اور تعلیمی اسناد کے مطابق دعا زہرا کی عمر 14سال ہے۔

درخواست میں مزید کہا گیا کہ پولیس نے کیس کاچالان سی کلاس میں ٹرائل کورٹ میں جمع کرا دیا ہے۔ درخواست گزار کی جانب سے فوری سماعت کی بھی درخواست دائر کردی گئی ، جس کے بعد آئندہ ہفتے درخواست کی سماعت متوقع ہے۔

یاد رہے 8جون کو سندھ ہائیکورٹ نے دعا زہرا کیس کا محفوظ فیصلہ سناتے ہوئے دعا زہرا کو اپنی مرضی سے فیصلہ کرنے کی اجازت دے دی تھی۔

سندھ ہائیکورٹ نے تحریری حکم نامے میں کہا تھا کہ دعا زہرا کی مرضی ہے، جس کے ساتھ جانا یا رہنا چاہے رہ سکتی ہے، شواہد کی روشنی میں اغوا کا مقدمہ نہیں بنتا۔

عدالت کا کہنا تھا کہ عدالت بیان حلفی کی روشنی میں اس نتیجے پر پہنچی ہے کہ دعا زہرہ اپنی مرضی سے شوہر کے ساتھ رہنا چاہے یا اپنے والدین کے ساتھ جانا چاہے تو جا سکتی ہے، وہ اپنے اس فیصلے میں مکمل آزاد ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں