جنسی ہراسانی پر باس کو قتل کرنے والے پاکستانی نوجوان کوسات سال قید کی سزا Dubai
The news is by your side.

Advertisement

جنسی ہراسانی پر باس کو قتل کرنے والے پاکستانی نوجوان کوسات سال قید کی سزا

دبئی : عدالت نے 22 سالہ پاکستانی نوجوان کو اپنے باس کو چھریوں کے وار کر کے قتل کرنے پر سات سال قید کی سزا سنادی، ملزم کو سزا مکمل کرنے کے بعد پاکستان ڈی پورٹ کردیا جائے گا ۔

تفصیلات کے مطابق پاکستانی نوجوان کی جانب سے اپنے باس کو قتل کرنے کے مقدمے کی سماعت دبئی کی عدالت میں ہوئی جہاں عدالت نے فریقین کے دلائل سننے کے بعد نوجوان کو سات سال قید کی سزا سناتے ہوئے سزا مکمل ہونے پر ملزم کو ڈی پورٹ کرنے کا حکم دے دیا۔

قبل ازیں ملزم نے عدالت کو اپنے حلفیہ بیان میں بتایا کہ جب سے پاکستان سے یہاں آکر ملازمت اختیار کی ہے ، باس کی جانب سے جنسی زیادتی کا نشانہ بنایا جاتا رہا ہوں اور واقعے کے روز بھی مجھے پارکنگ میں روک کر ذبردستی کرنے کی کوشش کی جس پر میں بھاگ کھڑا ہوا اور غصے کے عالم میں ایک سپر اسٹور سے تیزدھار چھری خرید کرقریبی پارک میں بیٹھ گیا۔

اس پارک میں میرا باس معمول کی چہل قدمی کے لیے آتا تھا جسے دیکھتے ہی میرا خون کھول اُٹھا اور میں نے پے در پے چھریوں کے وار کر کے زخمی کردیا، میرا ارداہ قتل کرنے کا نہیں تھا لیکن جب باس کو مرتا دیکھا تو میں نے ان سے معافی مانگی اور اسپتال پہنچانے میں مدد کی لیکن تب تک بہت دیر ہو چکی تھی۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں