The news is by your side.

Advertisement

بطخیں عدالتی جنگ جیت گئیں

پیرس: فرانسیسی عدالت میں بطخوں کے خلاف انوکھا مقدمہ دائر کرنے والے شہری کو شکست ہوگئی۔

غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق فرانسیسی عدالت میں بطخوں نے ’پخ پخ‘ کرنے کا کیس جیت لیا، شہری نے بطخوں کے پخ پخ کرنے کے خلاف درخواست دائر کی تھی جسے عدالت نے مسترد کردیا۔

رپورٹ کے مطابق کسان جو جنوب مغربی فرانس کے ضلع سوسٹن میں بطخوں کو پالنے والے ڈومینک ڈوئچے نے کہا کہ ’میں کیس جیتنے پر بہت خوش ہوں، میں اپنی بطخوں کو ذبح نہیں کرنا چاہتا تھا۔‘

عدالت نے بتایا کہ ریٹائرڈ کسان کی طرف سے رکھے گئے 60 بطخوں کے ریوڑ کا شور قابل قبول حدود میں ہے۔

بطخوں کے خلاف شکایت ڈوئچے کی پڑوسی نے دائر کی تھی جو ایک سال قبل شہر سے 50 میٹر دور ایک گھر میں منتقل ہوئی تھیں۔

پڑوسی کے وکیل نے عدالت میں موقف اختیار کیا کہ بطخوں کا شور بہت ہے اور میرے موکل کو اپنے باغ سے لطف اندوز ہونے یا گھر کی کھڑکیاں کھول کر سونا چھوڑ دیا ہے۔

رپورٹ کے مطابق یہ تنازع عدالتی معاملات کے سلسلے میں انوکھا ہے جس میں فرانسیسی دیہی روایات، خاص طور پر کھیتوں کے شور کو سنا گیا، جنہیں نئے رہائشیوں نے چیلنج کیا ہے۔

مزید پڑھیں: فرانسیسی عدالت نے مرغے کی بانگ کے حق میں فیصلہ دے دیا

اس سے قبل ایک ریٹائرڈ جوڑے نے فرانسیسی بحر اوقیانوس کے ساحل سے دور جزیرے اولیرون میں دوسرا گھر خریدا تھا، انہوں نے شکایت کی تھی کہ صبح کے وقت ایک کوکریل کی صبح سویرے ہی شور مچاتا تھا۔

کوریس فرانس نے کیس جیتنے کے بعد کہا تھا کہ ہم نے پورے فرانس کے لیے ایک جنگ جیت لی ہے، ہمارے پاس تمام دیہی آوازوں کی حفاظت کے لیے قانون کیوں نہیں ہونا چاہئے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں