ہالینڈ کی مسلمان مخالف جماعت کے سابق رکن نے اسلام قبول کرلیا
The news is by your side.

Advertisement

ہالینڈ کی مسلمان مخالف جماعت کے سابق رکن نے اسلام قبول کرلیا

ایمسٹرڈیم: ہالینڈ کی سب سے بڑی مسلمان مخالف سیاسی جماعت کے سابق رکن نے اسلام قبول کرلیا۔

غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق اسلامی تعلیمات کا مذاق اُڑانے والے مسلمان مخالف 40 سالہ ڈچ سیاست دان وین کلورین نے اسلامی تعلیمات سے متاثر ہوکر اسلام قبول کرلیا۔

وین کلورین سے قبل سیاسی جماعت کے رکن آرناوڈ وین ڈورن نے اسلام قبول کیا، انہوں نے وین کلورین کو اسلام قبول کرنے پر مبارک باد دی۔

اسلامی کتب کا تنقیدی جائزہ لیتے ہوئے اسلام کی روشن حقیقتیں آشکار ہوتی چلی گئیں

وین کلورین

وین کلورین نے کہا کہ وہ اسلام مخالف کتاب لکھ رہے تھے کہ اس دوران ان پر اسلام کے متعلق حقائق کھلتے گئے اور یوں ان کے اسلام دشمنی کے نظریات تبدیل ہوگئے۔

انہوں نے کہا کہ گزشتہ برس اکتوبر میں اسلام قبول کیا تھا تاہم اس کی ابتدا اسلام مخالف کتاب لکھنے کے دوران ہوگئی تھی، اسلامی کتب کا تنقیدی جائزہ لیتے ہوئے اسلام کی روشن حقیقتیں آشکار ہوتی چلی گئیں۔

وین کلورین نے اسلام کے خلاف اپنے سابقہ بیانات پر شرمندگی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ وہ اس وقت غلط تھے کیونکہ یہ سیاسی جماعت کی پالیسی تھی اور ہر غلط فعل کو اسلام سے جوڑ دیا جاتا تھا۔

واضح رہے کہ وین کلورین 2010 سے 2014 کے دوران رکن پارلیمنٹ رہے، وہ سابق سیاسی جماعت میں انتہائی مسلمان مخالف سیاست دان کے طور پر جانے جاتے تھے، انہوں نے اسلام کے خلاف سخت بیانات دئیے تھے۔

سیاسی جماعت پارٹی فار فریڈم کو چھوڑنے کے بعد انہوں نے نئی جماعت بنائی لیکن 2017 میں انتخابات میں ناکامی کے بعد انہوں نے سیاست کو خیرباد کہہ دیا تھا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں