site
stats
عالمی خبریں

امریکی فوجی جنوبی فلپائن سے نکل جائیں،فلپائنی صدر

فلپائنی صدر نے کہا ہے کہ امریکی خصوصی فوجی دستوں کو جنوبی فلپائن سے نکلنا ہو گا،تاہم امریکہ کے مطابق اسے فلپائن کی جانب سے سرکاری طور پر ملک سے فوجی نکالنے کا مطالبہ موصول نہیں ہوا۔

تفصیلات کےمطابق امریکی وزارتِ خارجہ کے ترجمان جان کربی کاپریس کانفرنس میں کہنا تھا کہ انہوں نے صدر دوتیرتے کے بیان سے متعلق رپورٹیں دیکھی ہیں لیکن انہیں اس سلسلے میں فلپائنی کی حکومت کی جانب سے کسی باضابطہ مطالبے کا علم نہیں ہے۔

صدر دوتیرے نے یہ واضح نہیں کیا کہ کتنے امریکی کب نکالے جائیں گے،تاہم انہوں نے کہا کہ مسلمانوں کی جانب سے مسلسل شورش کی وجہ فلپائن کے مغرب کے ساتھ تعلقات ہیں۔

انہوں نے سرکاری ملازمین کے ایک اجتماع سے کہا’یہ امریکی فوجی، انہیں منداناؤ سے جانا ہو گا۔ (مسلمان ان کی وجہ سے) اور زیادہ مشتعل ہو جاتے ہیں۔ اگر انہیں کوئی امریکی نظر آیا تو وہ اسے قتل کر دیں گے۔‘

صدر دوتیرتے کے مطابق جزیرہ منداناؤ میں مسلسل امریکی فوجی موجودگی کی وجہ سے حالات بگڑ سکتے ہیں۔وہ اس جزیرے میں مسلمان باغیوں اور کمیونسٹوں کے ساتھ امن مذاکرات شروع کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔

مزید پڑھیں: امریکی صدر اوباما نے فلپائنی صدر سے ملاقات منسوخ کردی

یاد رہے کہ گزشتہ ہفتے فلپائنی صدر کی جانب سے امریکی صدر اوباما کی والدہ کے بارے میں نازیبا الفاظ کے استعمال کرنے پر اوباما نے فلپائنی صدر سے ملاقات منسوخ کردی تھی.

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top