The news is by your side.

Advertisement

آج زمین کا عالمی دن منایا جارہا ہے

کراچی : آج پوری دنیا کے ساتھ ساتھ پاکستان میں بھی’ارتھ ڈے ‘منایا جارہاہے اس دن کی اہمیت کی مناسبت سے مختلف پروگراموں کا انعقاد کیاجارہا ہے۔ پاکستان کے مختلف شہروں میں مختلف تنظیموں نے ماحولیاتی آلودگی کی وجہ سے زمین کو پہنچنے والے نقصان کے بارے میں آگہی پھیلائی۔

اس سال کا عنوان ’’پلاسٹک سے پھیلنے والی آلودگی کاخاتمہ‘‘مقرر کیا گیا ہے، جس کا مقصد عالمی رہنماؤں کو ماحولیات کی اہمیت اور زمین دوست امور میں سرمایہ کاری پر راغب کرنا ہے۔

آج بروز اتوار ’ارتھ ڈے‘ اس عزم کے ساتھ منایا گیا کہ ماحولیات کے تحفظ اور اپنی دنیا کو رہنے کا ایک بہتر مقام بنانے کے لیے کاوشیں کی جائیں گی۔ اس موقعے پر دنیا بھر میں مختلف تقریبات اور پروگرامز کا انعقاد کیا گیا جن کا مقصد ماحولیات کے تحفظ کی اہمیت واضح کرنا تھا۔


پلاسٹک سے پھیلنے والی آلودگی کے خاتمے لیے تشکیل دی جانے والی اس مہم کے چار اہم زمرہ جات ہیں:

پلاسٹک سے پیدا ہونے والی آلودگی کے خاتمے کے لیے طے کردہ گلوبل فریم ورک کو اختیار کرنے کے لیے نچلی سطح تک مہم چلائی جائے۔

حکومتوں اور کارپوریشنز سے آلودگی کی روک تھام کے لیے عوامی پیمانے پر مہم چلانے کے لیے شہریوں کو شعور دیا جائے، انہیں منظم اور متحرک کیا جائے۔

دنیا بھر میں لوگوں کو شعور دیا جائے کہ وہ اپنی ذاتی سطح پر پلاسٹک کے خاتمے کی ذمہ داری اٹھائیں اور از خود پلاسٹک کے استعمال سے اجتناب کریں یا اسے کم کریں اور جو بھی پلاسٹک استعمال کریں اسے ری سائیکل کریں۔

حکومتوں کی جانب سے پلاسٹک کے خاتمے کی روک تھام کے لیے کی جانے والی قانون سازی کی تشہیر کی جائے۔


یہ 1970ء کی بات ہے کہ جب دنیا میں پہلی مرتبہ ’ارتھ ڈے‘منایا گیا۔ یہ وہ زمانہ تھا جب ایک طرف تو ماحولیات کی بقاء کے لیے کوششوں کا آغاز کیا گیا اور دوسری طرف تیل کی بڑھتی قیمتوں اور فضائی آلودگی کی وجہ سے اس دن کو منانے کی اہمیت بھی دو چند ہو گئی۔تب سے اب تک ’ارتھ ڈے‘ دنیا کے ایک سو بانوے ممالک سے بھی زیادہ ممالک میں باقاعدگی سے منایا جاتا ہے۔

دنیا بھر میں اس موقعے پر اپنے ماحول کی صفائی اور فضائی آلودگی پھیلانے سے گریز کے لیے آگہی کے پروگرام منعقد کیے جاتے ہیں۔ جبکہ مقامی کمیونٹیز اپنے اپنے علاقوں میں صفائی کرکے اس دن کی اہمیت اجاگر کرتی ہیں۔ بہت سی تنظیمیں شہر میں ساحل ِ سمندر، دریاؤں یا دیگر قدرتی مقامات پرجا کر صفائی کا کام کرکے زمین کو صاف ستھرا رکھنے کی کوششوں میں اپنا حصہ ادا کرتی ہیں۔

پوری دنیا کے ساتھ ساتھ پاکستان میں بھی اس دن کی اہمیت پر مختلف پروگراموں کا انعقاد کیا گیا۔ پاکستان کے مختلف شہروں میں مختلف تنظیموں نے ماحولیاتی آلودگی کی وجہ سے زمین کو پہنچنے والے نقصان کے بارے میں آگہی پھیلائی۔ ان تنظیموں نے یہ بھی بتایا کہ انفرادی سطح پر ہر انسان کس طرح سے اپنے ارد گرد کے ماحول کو صاف رکھ کر اس دنیا کو ماحولیاتی آلودگی سے بچانے میں اپنا کردار ادا کر سکتا ہے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘ مذکورہ معلومات  کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہنچانے کےلیے سوشل میڈیا پرشیئر کریں

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں