The news is by your side.

Advertisement

اب وزن کم کرنا نہایت آسان !! جانیے کیسے ؟

بڑھتی عمر کے ساتھ موٹاپا یا وزن کا بڑھنا زندگی کو اور بھی دشوار بنا دیتا ہے، جس کے سدباب کیلئے بہت سارے جتن کرنا پڑتے ہیں لیکن مستقل مزاجی کے فقدان کے باعث موٹاپا نہیں جاتا۔

اگر آپ کا وزن زیادہ ہے تو یہ آپ کی ہڈیوں، جوڑوں اور پٹھوں پر زیادہ دباؤ اور تناؤ ڈال سکتا ہے لہٰذا ضروری ہے کہ ورزش کو اپنا معمول بنایا جائے تاکہ نہ صرف ظاہری طور پر آپ فٹ نظر آئیں بلکہ آپ کی اندرونی صحت بھی برقرار رہے۔

ذیل میں ہم آپ کو بتائیں گے کہ کون سی ورزش آپ کے لیے فائدہ مند رہے گی جو آپ کے جوڑوں اور پٹھوں میں لچک کے ساتھ ساتھ طاقت بھی پیدا کرے گی۔

چہل قدمی:
انڈین ویب سائٹ این دی ٹی وی کے مطابق اگر آپ نے ابھی وزن کم کرنے کے لیے ورزش شروع کی ہے تو چہل قدمی بہترین طریقہ ہے۔ چہل قدمی جسم میں خون کی گردش بڑھاتی ہے، پھیپھڑوں کی صلاحیت میں بھی اضافہ کرتی ہے اور جسم میں دیگر افعال کو بھی بہتر کرتی ہے جس سے وزن تیزی سے کم ہو سکتا ہے۔

تیز دوڑنا:
جاگنگ چہل قدمی کے مقابلے میں وزن کم کرنے میں زیادہ مؤثر ہے لیکن اسے آہستہ آہستہ معمول میں شامل کیا جائے ورنہ یہ آپ کے جوڑوں اور تانگوں میں تناؤ کا باعث بن سکتی ہے۔ اپنے جسم کی لچک اور طاقت کو آہستہ آہستہ بڑھانا ضروری ہے۔

اسٹیشنری سائیکل:
سٹیشنری سائیکل آپ کے جسم کی لچک اور طاقت کو بغیر کسی دباؤ کے بڑھانے کا ایک اور بہترین طریقہ ہے۔ چونکہ سٹیشنری بائک کو اپنی سہولت کے مطابق روکا جا سکتا ہے، یہ سائیکل چلانے کا ایک صحت مند متبادل ہے۔

پش اپ:
ورزشیں جیسے پش اپس، سکواٹس وغیرہ زیادہ وزن کے حامل افراد کے لیے شروع میں تکلیف دہ ہو سکتی ہیں لیکن اگر انہیں معمول کا حصہ بنا لیا جائے تو وزن میں حیرت انگیز طور پر کمی ممکن ہے۔

تیراکی:
تیراکی اور پانی کی ایروبکس ابتدائی طور پر وزن کم کرنے کے بہترین طریقے ہیں۔

swimming | Definition, History, Strokes, & Facts | Britannica

ڈانس:
ڈانس ایک تفریح ہی نہیں بلکہ ایک بھرپور ورزش بھی ہے۔ رقص سے آپ لطف اندوز ہوتے اپنا وزن بھی کم کر سکتے ہیں۔

یوگا:
یوگا وزن کم کرنے کا ایک مقبول طریقہ ہے کیونکہ اس کے بےشمار طبی فوائد تو ہیں ہی لیکن یہ ذہنی طور پر بھی پُرسکون رکھنے میں مد دیتا ہے۔ جدید دور میں ذہنی اور جسمانی طور پر چاک و چوبند رہنے کے لیے یوگا کی ورزشوں کو بہترین خیال کیا جاتا ہے۔

یاد رکھیں کہ باقدعدگی سے ورزش کریں اور مصروف رہیں، مشروبات کو گھونٹ کھونٹ کر پیئیں بجائے اس کے کہ غٹاغٹ اسے انڈیل لیں۔

ہر بار کھانے سے پہلے پانی ضرور پیئیں اور کھانے کے بعد کوشش کریں کہ آدھے گھنٹے یا ایک گھنٹے بعد پانی پئیں۔ اس کے علاوہ کھانے کے ساتھ سلاد لازمی کھائیں، ہوسکے تو کھانے سے پہلے سلاد کھائیں یہ کھانا ہضم کرنے میں مدد دیتا ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں