ایان علی کی سپریم کورٹ میں سیکریٹری داخلہ کیخلاف توہین عدالت کی درخواست -
The news is by your side.

Advertisement

ایان علی کی سپریم کورٹ میں سیکریٹری داخلہ کیخلاف توہین عدالت کی درخواست

اسلام آباد : ماڈل ایان علی کی جانب سے سپریم کورٹ میں سیکریٹری داخلہ کے خلاف توہین عدالت کی درخواست دائر کردی گئی، درخواست میں سیکریٹری داخلہ اور دیگر ذمہ داران کے خلاف توہین عدالت کی کارروائی کی استدعا کی ہے ۔

ماڈل ایان علی پریشان ہے کیونکہ عدالت کے حکم کے باوجود اب تک ایان علی کا نام ای سی ایل سے نہیں نکالا جا سکا ، ایان علی کی جانب سے سپریم کورٹ میں سیکریٹری داخلہ کے خلاف توہین عدالت کی درخواست دائر کی گئی ہے۔

ایان علی کا کہنا ہے کہ سپریم کورٹ کے احکامات کے باوجود نام ای سی ایل سے نہیں نکالا گیا۔

ایان علی نے کی سپریم کورٹ میں استدعا کی کہ ان کا نام ای سی ایل سےنکالا جائے اور سیکریٹری داخلہ اور دیگر ذمہ داران کے خلاف توہین عدالت کی کارروائی کی جائے۔


مزید پڑھیں : عدالت کے حکم کے باوجود ایان کا نام ابھی تک ای سی ایل سے نہ نکالاجا سکا


یاد رہے 7 فروری کوایان علی کی درخواست پر ای سی ایل سے نام نکالنے سے متعلق سندھ ہائیکورٹ میں سماعت ہوئی تھی ، ایان کی جانب سے درخواست کی گئی کہ انیس جنوری کو کئی روز گزر گئے لیکن نام نہیں نکالا گیا،،متعلقہ حکام کیخلاف توہین عدالت کیخلاف کاروائی کی جائے۔

جواب میں ڈپٹی اٹارنی جنرل نے عدالت میں کہا کہ سپریم کورٹ فیصلے کی تفصیلی کاپی نہیں ملی، اس لئے وقت دیا جائے۔

جس پر جسٹس فاروق شاہ نے سماعت ملتوی کرتے ہوئے کہا کہ جب تک سپریم کورٹ کا حکم نہ دیکھ لیں نیا حکم جاری نہیں کرسکتے۔

یاد رہے سپریم کورٹ نے ایان علی ای سی ایل کیس سے متعلق وزارت داخلہ کی جانب سے دائر اپیل مسترد کرتے ہوئے ایان علی کا نام ای سی ایل میں سے نکالنے کا حکم دیا تھا جبکہ سندھ ہائی کورٹ کا فیصلہ برقرار رکھتے ہوئے ماڈل ایان علی کو بیرون ملک جانے کی اجازت دے دی تھی۔

چیف جسٹس سماعت کے دوران برہم ہوئے اور کہا تھا کہ بتائیں آج تک دفعہ109میں کتنے قاتلوں کا نام ای سی ایل میں ڈالا، ایان علی کا نام آپ نے تیسری بارای سی ایل میں ڈالا ہے۔

واضح رہے کہ ایان علی کو 2015 میں راولپنڈی ایئر پورٹ سےکروڑوں ڈالرمالیت کی غیرملکی کرنسی اسمگل کرنے کےالزام میں گرفتار کیاگیاتھا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں