The news is by your side.

Advertisement

الیکشن کمیشن نے2018 انتخابات کے لیے ضابطہ اخلاق تیار کرلیا

اسلام آباد: الیکشن کمیشن آف پاکستان نے 2018انتخابات میں سیاسی جماعتوں کے لیے ضابطہ اخلاق تیار کرلیا،خواتین کے انتخابی عمل میں حصہ لینے پر زوردیا ہے۔

تفصیلات کےمطابق الیکشن کمیشن کے 2018 کے انتخابات کے لیے تیار ضابطہ اخلاق کے تحت امیدوار ایک سیاسی مخالف اور کارکنوں کی ذاتی زندگی پر تنقید نہیں کرسیکں گے۔

سیاسی جماعتوں کےلیے تیار ضابطہ اخلاق کے مطابق انتخابات میں مذہب،نسل،ذات کی بنیاد پر الیکشن میں حصہ لینے کی مخالفت نہیں کی جاسکے گی۔

انتخابات میں شامل سیاسی جماعتیں کسی ایسے رسمی یاغیررسمی معاہدے کا حصہ نہیں بنیں گے جس میں خواتین کو ووٹ کےحق سے محروم رکھاجائے۔

الیکشن کمیشن نے2018 کے عام انتخابات کے لیے 41 نکاتی مجوزہ ضابطہ اخلاق تیار کر کے 26 اکتوبرکوسیاسی جماعتوں کی رائے طلب کر لی ہے ۔

انتخابات میں لسانیت،علاقائیت،فرقہ واریت پر مبنی تقاریر کی اجازت نہیں ہو گی،انتخابی فروغ کے لیے صرف سرکاری میڈیا کو استعمال کیا جائے گا۔

واضح رہےکہ ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی ،انتخابی بدعنوانی قابل سزا جرم ہوں گے،خلاف ورزی پرانتخاب کالعدم قرار دیاجاسکتا ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں