سینیٹ انتخابات کے لیے الیکشن کمیشن کا ضابطہ اخلاق جاری -
The news is by your side.

Advertisement

سینیٹ انتخابات کے لیے الیکشن کمیشن کا ضابطہ اخلاق جاری

اسلام آباد: کل 3 مارچ کو ہونے والے سینیٹ انتخابات کے لیے الیکشن کمیشن نے ضابطہ اخلاق جاری کردیا۔

تفصیلات کے مطابق ایوان بالا (سینیٹ) کے انتخابات کل منعقد ہورہے ہیں۔ الیکشن کمیشن نے انتخابات کے لیے ضابطہ اخلاق جاری کردیا۔

الیکشن کمیشن کے جاری کردہ ضابطہ اخلاق کے مطابق قومی و صوبائی اسمبلی اراکین کو سیکریٹریٹ کا کارڈ ساتھ لانا ہوگا۔ موبائل فون پولنگ اسٹیشن لانے پر مکمل پابندی ہوگی۔

ضابطہ اخلاق میں کہا گیا ہے کہ بیلٹ پیپر اور ووٹ کی رازداری کو یقینی بنانا ہوگا۔ بیلٹ پیپر خراب کرنے اور جعلی بیلٹ پیپر کے استعمال پر کارروائی ہوگی۔ بیلٹ پیپر پولنگ اسٹیشن سے باہر لے جانے پر پابندی ہوگی۔

الیکشن کمیشن کا کہنا ہے کہ غیر متعلقہ شخص کو بیلٹ پیپر دینے پر آر او فوری سزا سنا سکتا ہے۔ ریٹرننگ افسر کو مجسٹریٹ درجہ اول کے تحت اختیارات حاصل ہیں جبکہ انہیں بیلٹ پیپر منسوخ کرنے کا اختیار بھی حاصل ہوگا۔ علاوہ ازیں ریٹرننگ افسر کو سمری ٹرائل کر کے سزا سنانے کا حق بھی حاصل ہوگا۔

ضابطہ اخلاق میں مزید کہا گیا ہے کہ کسی بھی قسم کی بے قاعدگی اور بد نظمی پر آر او انتخابی عمل معطل کرسکے گا۔ پولنگ کے روز پولنگ اسٹیشن کے باہر رینجرز اور ایف سی تعینات ہوگی۔

الیکشن کمیشن کا مزید کہنا ہے کہ رینجرز اور ایف سی کی تعیناتی کا فیصلہ ریٹرننگ افسران کی تجویز پر کیا گیا۔ ووٹر ایک ہی راستے سے پولنگ اسٹیشن جائیں گے۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں۔ مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں