The news is by your side.

Advertisement

انتخابی ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی پر امیر مقام عدالت میں طلب

پشاور: انتخابی ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی پروزیراعظم کے مشیرامیر مقام کے پیش نہ ہونے پر عدالت نے برہمی کا اظہارکیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق پشاور کے حلقے پی کے 8 میں ضمنی انتخاب 12 مئی کو ہونے جا رہا ہےجس کے لیے الیکشن کمیشن کے پی کے نے ضابطہ اخلاق بھی جاری کردیا ہے۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ چند روز قبل وزیر اعظم کے مشیر امیر مقام نے مسلم لیگ ن کے امیدوار ارباب وسیم احمد کے ہمراہ نہ صرف حلقہ کا دورہ کیا بلکہ حلقہ کے لیے ترقیاتی کاموں کا اعلان بھی کیا تھا۔

جب کہ ضباطہ اخلاق کے مطابق الیکشن مہم کے دوران حکمراں جماعت حلقہ کے لیے کسی بھی قسم کی ترقیاتی منصوبے کا اعلان نہیں کر سکتی اور نہ ہی وزیر و مشیر مہم کا حصہ بن سکتے ہیں۔ اس عمل کو ووٹرز پر اثر انداز ہونے کے مترادف سمجھا جاتا ہے۔

جس پر ڈسٹرکٹ ریٹرنگ آفیسر نے ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی کا نوٹس لیتے ہوئے مشیرِ وزیرِ اعظم امیر مقام کو طلب کرلیا، تاہم وہ پیش نہیں ہوسکے.

اس موقع پر امیر مقام کے وکیل نے بتایا کہ وہ اس وقت شانگلہ میں ہیں اور فوری واپسی ممکن نہیں،کم از کم دو دن کی مہلت دی جائے۔

اس پر ڈسٹرکٹ ریٹرنگ آفیسر نے برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ امیر مقام کو پیشگی اطلاع دی تھی اس لیے انہیں آج پیش ہونا چاہیئے تھا۔

انہوں نے وکیل کے موقف کو مسترد کر تے ہوئے امیر مقام کو آج ہی پیش ہونے کا حکم جاری کیا۔

یاد رہے2013 میں ہونے والے انتخابات میں اس حلقے سے مسلم لیگ کے امیدوارارباب اکبرحیات نے اپنے مدمقابل جمعیت علمائےاسلام (فضل الرحمن) کے امیدوار اور سابق صوبائی وزیر آصف اقبال کو شکست دے کرکامیاب ہوئے تھے۔ وہ حال ہی میں دل کا دورہ پڑنے سے جاں بحق ہوگئے تھے۔

واضع رہے 12مئی کو ہونے والے ضمنی الیکشن میں میں مقابلہ مسلم لیگ (ن) کے ارباب وسیم احمد ،جمعیت علمائے اسلام (فضل الرحمن) کے سابق صوبائی وزیر آصف اقبال اور تحریک انصاف کے شہزاد خان کے درمیان ہوگا۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں