The news is by your side.

Advertisement

آئندہ عام انتخابات میں بڑی عمر کے ریٹرننگ افسران نہ لینے کا فیصلہ

اسلام آباد : الیکشن کمیشن نے آئندہ عام انتخابات میں بڑی عمر کے ریٹرننگ افسران نہ لینے کا فیصلہ کیا ہے ، 2018ءمیں الیکشن کمیشن 55سال سے کم عمر والے آراوز لائے جائیں گے۔

الیکشن کمیشن ذرائع کے مطابق آئندہ عام انتخابات میں بڑی عمر کے ریٹرننگ افسران نہ لینے کا فیصلہ کیا گیا ہے 2018ءمیں الیکشن کمیشن 55سال سے کم عمر والے آراوز لائے جائیں گے اور سیاسی وابستگی رکھنے والے ریٹرننگ افسران کی بھی چھٹی کردی جائیگی۔

سال 2013 کے انتخابات کے بعد ریٹرننگ افسران پربیشمار اعتراضات اٹھے تھے، الیکشن کمیشن نے تنقید سے بچنے کےلئے پرانی غلطی نہ دہرانے کی ٹھان لی ہے، الیکشن کمیشن نے صوبائی الیکشن کمشنرز کو سیاسی وابستگیوں سے بالاتر ریٹرننگ افسران منتخب کرنے کی ہدایت کی ہے، ایسے افسران کو ترجیح دی جائے، جو جدید ٹیکنالوجی سے واقف ہوں ۔

الیکشن کمیشن کے مطابق صوبائی الیکشن کمشنرز آئندہ اجلاس میں تمام عملے کی فہرست سے متعلق آگاہ کریں، جانچ پڑتال کے بعد عملے کی ٹریننگ کا آغاز رواں برس جولائی سے کیا جائے گا۔


مزید پڑھیں : پاکستان الیکشن کمیشن نے عام انتخابات کی تیاریاں شروع کردیں


اس سے قبل الیکشن کمیشن کا کہنا تھا کہ عام انتخابات دوہزار اٹھارہ کی تیاریاں شروع کردی گئی ہے، انتخابات کیلئے سات لاکھ چونتیس ہزار افراد پر مشتمل عملہ درکار ہوگا، وفاقی اور صوبائی حکومتوں کی جانب سے ساڑھے چھ لاکھ ملازمین کے نام موصول کرلئے ہیں۔

الیکشن کمیشن نے ستر فیصد پولنگ اسٹیشنز کی تصدیق کردی ہے، اسی ہزار میں سے چھپن ہزار اسٹیشنز کی فہرست تیار کرلی گئی ہے، حساس اسٹیشنز پر سی سی ٹی وی کیمرے سیکیورٹی اداروں کی مشاورت سے نصب کیے جائیں گے، پریزائڈنگ افسران کو اسمارٹ فون دینے کی تجویز، جدید کمپیوٹرز، اسکینرز، فیکس مشینز اور دو ڈیٹا انٹری آپریٹرز بھی فراہم کیے جائیں گے۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں