The news is by your side.

Advertisement

عمران خان اور جہانگیر ترین کی نا اہلی کیسز کی سماعت26 دسمبر تک ملتوی، فیصلہ محفوظ

اسلام آباد : الیکشن کمیشن نے پاکستان تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان ،جہانگیر ترین کی نااہلی کیس کی سماعت چھبیس دسمبر تک ملتوی کردی، تحریک انصاف کے وکیل کا کہنا ہے کہ جان بوجھ کر تاخیر ی حربے اختیار کئے جارہے ہیں۔

الیکشن کمیشن میں عمران خان،جہانگیرترین اور کیپٹن صفدر نااہلی کیسز کی سماعت چیف الیکشن کمشنر کی سربراہی میں بینچ نے کی، جہانگیر ترین کےوکیل نے لیگی رہنما کی وکیل تبدیل کرنےکی استدعا پراعتراض اٹھاتے ہوئے کہا کہ فیصلہ محفوظ ہونے کے بعد وکیل تبدیل نہیں کیا جاسکتا، جان بوجھ کر تاخیری حربے استعمال کئے جارہے ہیں۔

چیف الیکشن کمشنر نے ریمارکس میں کہا کہ تمام مقدمات سننے کے بعد ایک ساتھ فیصلہ کرنا چاہتے ہیں۔

نعیم بخاری نے اپنے مؤکلین کا دفاع کرتے ہوئے کہا کہ جب ریفرنس اسپیکر نے ارسال کیا ہے تو پھر ریفرنس دائر کرنے والے ارکان اسمبلی غیر متعلقہ ہوگئے ہیں، اسپیکر قومی اسمبلی کو اپنے ریفرنسز کا دفاع خود کرنا ہوگا، ہم بحث کے لئے آج بھی تیار ہیں۔

جہانگیر ترین کے وکیل نے کہا کہ جان بوجھ کر تاخیر حربے اختیار کئے جارہے ہیں، نعیم بخاری اور چیف الیکشن کمشنر کے درمیان مکالمہ بھی دیکھنے میں آیا۔

چیف الیکشن کمشنر نے کہا کہ ایک ممبر کی آنکھ کا آپریشن ہے تو نعیم بخاری نے کہا کہ اس عمر میں یہی ہوتا ہے آنکھوں میں موتیا اتر آتا ہے چیف الیکشن کمشنر نے کہا کہ عمر میں آپ بھی اتنے چھوٹے نہیں۔


مزید پڑھیں : نااہلی کیس، عمران خان اور کیپٹن صفدر سے جواب طلب


الیکشن کمیشن نے عمران خان،جہانگیرترین کی نااہلی کیس کی سماعت چھبیس دسمبر تک جبکہ کیپٹن صفدر کی نااہلی کیسز کی سماعت بھی19 دسمبر تک ملتوی کردی۔

سماعت کے بعد پی ٹی آئی کے ترجمان فواد چوہدری نے میڈٰیا سے گفتگو میں کہا کہ ن لیگ چھ سے زائد وکیل تبدیل کر چکی ہے، نعیم الحق کا کہنا تھا وزیراعظم کیخلاف فیصلے کے بعد کرپشن کا دروازہ بند ہو جائیگا۔

یاد رہے کہ مسلم لیگ ن کے رہنما حنیف عباسی نے اثاثے چھپانے پرعمران خان اور جہانگیر ترین کی نا اہلی کے خلاف الیکشن کمیشن اور سپریم کورٹ میں درخواستیں دائر کر رکھی ہیں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں