The news is by your side.

Advertisement

حلقہ این اے 122لاہورمیں ووٹوں کی منتقلی کیس کی سماعت

اسلام آباد: الیکشن کمیشن میں قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 122لاہور میں ووٹوں کی منتقلی کیس کی سماعت 19جنوری تک ملتوی کر دی گئی، ایازصادق کے وکیل الیکشن کمیشن میں پیش نہیں ہوئے۔

چیف الیکشن کمیشن سردار احمد رضا کی سربراہی میں علیم خان کی جانب سے دائر کردہ درخواست کی سماعت کی گئی تاہم اسپیکرقومی اسمبلی ایازصادق کے وکیل پیش نہیں ہوئے جس کے سبب سماعت 11 روز کے لئے ملتوی کردی گئی۔

چیف الیکشن کمیشن نے کہا ہے کہ 19 جنوری کو گواہان کے بیانات قلم بند کرکے ان پر جرح کی جائے گی اور اس کے بعد فیصلہ سنایا جائے گا۔

سماعت کےبعد تحریک انصاف کے امیدوارعلیم خان نے میڈیا سے گفتگو میں کہا کہ 30ہزار ووٹوں کی منتقلی کا معاملہ ہے اور الیکشن کمیشن کے پاس صرف 800ووٹوں کا ریکارڈ ہے۔

انہوں نے یہ بھی کہا کہ ایاز صادق سپیکر جعل سازی سے بنے اگر جعلسازی نہیں کی گئی تو نشاندہی کریں ہم معذرت کرلیں گے۔

مسلم لیگ ن کے دانیال عزیزنے میڈیا کو بتایا کہ این اے 122 میں ووٹ منتقل نہیں ہوئے، عوام کے حقوق کے ساتھ مذاق کیا جارہا ہے۔

ان کا یہ بھی کہنا تھا کہ پی ٹی آئی کے پاس کوئی ثبوت نہیں ہیں پہلے بھی جوڈیشل کمیشن میں بھی ایسا ہی کیا گیا تھا۔

دانیال عزیز نے دعویٰ کیا ہے کہ آئندہ ہفتے این اے 154 کے ووٹ منتقل کرنے کے ثبوت سامنے لائیں گے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں