The news is by your side.

Advertisement

الیکشن کمیشن میں پی ٹی آئی ممنوعہ فنڈنگ کیس نئے موڑ پر

اسلام آباد : الیکشن کمیشن آف پاکستان نے سات سال سے زیر التوا پاکستان تحریک انصاف کے خلاف غیر ملکی فنڈنگ ​​کیس کی سماعت کرنے کا فیصلہ کرلیا اور فریقین کو کل طلب کر لیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق سات سال زیر التوا رہنے والا پی ٹی آئی ممنوعہ فنڈنگ کیس ایک بار پھر الیکشن کمیشن کی عدالت میں آگیا اور نئے مرحلے میں داخل ہو گیا ہے۔

اس حوالے سے الیکشن کمیشن کا اہم اجلاس ہوا ، جس میں اسکروٹنی کمیٹی کی رپورٹ کا جائزہ لینے کے بعد فیصلہ کیا گیا کہ پی ٹی آئی ممنوعہ فنڈنگ کیس کی سماعت کی جائے گی۔

الیکشن کمیشن کل اس کیس کی دوبارہ سماعت کرے گا، اس سلسلے میں عدالت نے فریقین کو کل طلب کر لیا ہے، ذرائع کا کہنا ہے کہ اسکروٹنی کمیٹی کی رپورٹ فریقین کے سامنے رکھی جائے گی۔

اس سے قبل چیف الیکشن کمشنر (سی ای سی) سکندر سلطان راجہ نے صحافیوں سے غیر رسمی گفتگو کرتے ہوئے تصدیق کی تھی کہ اسکروٹنی کمیٹی کی رپورٹ موصول ہوگئی ہے، اسکروٹنی کمیٹی کی طرف سے بھیجی گئی سیل شدہ رپورٹ میری میز پر ہے، تاہم، میں نے اسے ابھی تک نہیں پڑھا۔”

سکندر سلطان راجہ نے کہا تھا کہ الیکشن کمیشن آف پاکستان کے حکام اسکروٹنی کمیٹی کی رپورٹ کو ڈی سیل کرنے کے بعد آئندہ اجلاس میں جائزہ لیں گے تاکہ آئندہ کی حکمت عملی طے کی جاسکے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں