The news is by your side.

Advertisement

وکی لیکس کے بانی جولین اسانج کا انٹرنیٹ کنکشن کاٹ دیا گیا

لندن : امریکی صدارتی انتخابات سے متعلق خفیہ دستاویزات منظرعام پر لانے والے وکی لیکس کے بانی جولین اسانج کا انٹرنیٹ کنکشن کاٹ دیا گیا۔

لندن میں ایکواڈور کے سفارت خانے میں پناہ حاصل کیے ہوئے وکی لیکس کے بانی کے لیے انٹرنیٹ تک رسائی ختم کردی گئی ہے، ایکوڈاور کی وزارت خارجہ کی جانب سے جاری کیا گیا ہے۔

assange-1

جاری کردہ بیان میں کہا گیا ہے کہ ایکواڈور اسانج کو سیاسی پناہ دینے کے اپنے فیصلے پر قائم ہے تاہم ایکواڈور کسی دوسرے ملک کی خودمختاری کا احترام کرتا ہے اور انتخابات میں نہ دخل دینا چاہتا ہے اور نہ ہی کسی مخصوص امیدوار کا حامی ہے۔

یاد رہے کہ وکی لیکس کے بانی نے ہلیری کلنٹن سے متعلق خفیہ دستاویزات کو منظر عام پر لائے تھے جس میں امریکی مالیاتی ادارہ گولڈ مین ساکس کیلئے ہیلیری کلنٹن کی تین تقاریر کے مسودات شائع کئے تھے۔


مزید پڑھیں: وکی لیکس کا امریکی انتخابات سے قبل 10 لاکھ دستاویزات جاری کرنے کا اعلان


انہوں نے امریکی انتخابات سے قبل دس لاکھ خفیہ دستاویزات جاری کرنے کا اعلان کیا تھا اور کہا تھا کہ انتخابات تک گزشتہ حکومتوں سے متعلق خفیہ دستاویزات کو منظر عام پر لاتے رہیں گے۔

واضح رہے کہ جولین آسانج اس وقت لندن میں ایکواڈور کے سفارت خانہ میں قیام پذیر ہے اور امریکہ کے انتہائی مطلوب افراد کی فہرست میں شامل ہیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں