The news is by your side.

Advertisement

کراچی : تعلیمی اداروں میں منشیات سپلائی کرنے والا چھ رکنی گروہ گرفتار

کراچی : گلشن اقبال پولیس نے تعلیمی اداروں میں منشیات سپلائی کرنے والے چھ رکنی گروہ کو گرفتار کرلیا،ملزمان سے چار کلو سے زائد چرس،50 پیکٹ ہیروئن، اسلحہ اور15موبائل برآمد کیے گئے ہیں۔

یہ بات ایس ایس پی ایسٹ اظفر مہیسر نے پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہی۔ انہوں نے بتایا کہ ڈالمیا میں کارروائی کے دوران پکڑے گئے ملزمان میں گروہ کا سرغنہ شاکرڈاڈا، ناصر، فیضان، حسین شاہ ،نثار عرف حاجی اور حذیفہ شامل ہیں۔

ملزمان تعلیمی اداروں کے علاوہ رہائشی علاقوں میں آئس اور کرسٹل فراہم کرتے تھے، ایس ایس پی ایسٹ نے بتایا کہ گرفتار ملزمان کے موبائل فون سے منشیات حاصل کرنے والے اسکول کالج اور یونیورسٹیوں کے طلباء کوریکارڈ بھی نکالا ہے۔

موبائل ڈیٹا سے منشیات خریدنے والوں کی فہرست تیار کرلی گئی منشیات لینے والے طلبا کے والدین سے رابطہ کر کے ان معلومات سے ان کو بھی آگاہ کریں گے۔

اظفر مہیسر کا مزید کہنا تھا کہ گرفتار ہونے والے چھ رکنی گروہ سے ساڑھے کلوچرس،50 پیکٹ ہیروئن اور اسلحہ برآمد کیا ہے، مذکورہ ملزمان کے خلاف مختلف تھانوں میں30مقدمات درج ہیں۔

ملزمان کے گروہ میں خواتین بھی شامل ہیں،ٹوٹل20رکنی گروہ ہے، گرفتار گروہ بلوچستان سے آپریٹ ہوتا ہے، جن جامعات کے طلبہ آئس کرسٹل حاصل کرتے ہیں ان کے وائس چانسلر سے بھی رابطے کیے ہیں۔

ایس ایس پی ایسٹ نے کہا کہ یہ منشیات اب منظم جرائم میں شامل ہورہا ہے، شیشہ بار جیسے مقامات سے ایسے نشوں کی لت شروع ہوتی ہے، ہیروئن کے نشے کا ٹیسٹ تین ماہ تک آجاتا ہے، والدین اپنے بچوں کا ٹیسٹ ضرور کرائیں بچوں کی نہ سنیں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں