The news is by your side.

Advertisement

غزہ حملے کے بعد مصر نے 40 دہشت گرد مار دیے

غزہ: مصر کے زیرِ انتظام علاقے غزہ میں سڑک کنارے بم حملے کے بعد مصری پولیس نے کریک ڈاؤن میں چالیس مبینہ دہشت گرد مار دیے۔

تفصیلات کے مطابق غزہ میں سیاحوں کی ایک بس سڑک کنارے بم کی زد میں آنے کی وجہ سے تین ویت نامی سیاح جب کہ ایک مصری گائیڈ جاں بحق ہو گئے تھے، جس کے بعد مصری پولیس نے علاقے میں کریک ڈاؤن کیا۔

دہشت گرد ریاستی و سیاحتی اداروں اور چرچز پر مسلسل حملوں کی تیاری کر رہے تھے۔

مصری وزارتِ داخلہ

خوں ریز واقعے کے بعد مصری پولیس نے غزہ کے مختلف علاقوں میں چھاپے مارے، جن کے دوران پولیس نے مبینہ طور پر چالیس دہشت گردوں کو ہلاک کر دیا۔

مصری وزارتِ داخلہ کے مطابق بم حملے اہرام کے لیے مشہور علاقے غزہ اور آشوب زدہ جزیرہ نمائے سینا میں کیے گئے۔

مصری وزارتِ داخلہ کے مطابق تیس دہشت گرد غزہ کے علاقے میں دو چھاپوں کے دوران مارے گئے جب کہ دس دہشت گرد شمالی سینا میں مارے گئے۔

حکام کا کہنا ہے کہ دہشت گردوں کے خلاف کارروائیاں معلومات ملنے کے بعد کی گئیں، دہشت گرد ریاستی و سیاحتی اداروں اور چرچز پر مسلسل حملوں کی تیاری کر رہے تھے۔


یہ بھی پڑھیں:  مصر: قاہرہ میں سیاحوں کی بس سڑک کنارے بم سے ٹکرا گئی، چار افراد ہلاک


حکام کی جانب سے جاری بیان میں کہا گیا کہ نیشنل سیکورٹی کو اطلاع ملی کہ دہشت گردوں کا ایک گروپ ریاستی اداروں بالخصوص معاشی اداروں، سیاحت، مسلح افواج، پولیس اور عیسائیوں کی عبادت گاہوں پر شدید حملوں کی سیریز کی منصوبہ بندی کر رہا تھا۔

خیال رہے کہ جمعے کی شام کو غزہ اہرام کے قریب ضلع الحرم میں سڑک کنارے نصب بم کی زد میں سیاحوں کی ایک بس آ گئی تھی، جس میں چار افراد جاں بحق ہو گئے تھے، جب کہ 11 ویت نامی سیاح اور مصری بس ڈرائیور زخمی ہوگئے تھے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں