The news is by your side.

Advertisement

ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی پر سرکاری ملازمین کو معطل کیا جائے، چیف سیکریٹری سندھ

کراچی : چیف سیکریٹری سندھ اعظم سلیمان نے کہا ہے کہ ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی کرنے والے سرکاری ملازمین کو معطل کرکے ان ملازمین کو الیکشن کے دن بھی ڈیوٹی پر بلایا جائے۔

یہ بات انہوں نے الیکشن 2018کے سلسلے میں انتخابی ضابطہ اخلاق کے حوالے سے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہی، چیف سیکریٹری اعظم سلیمان کی زیر صدارت انتخابی ضابطہ اخلاق پر اجلاس کا انعقاد کیا گیا، اس موقع پر متعلقہ حکام کی جانب سے اجلاس کے شرکاء کو بریفنگ بھی دی گئی.

بریفنگ میں بتایا گیا کہ ضانطہ اخلاق کی خلاف ورزی پرمحکمہ تعلیم کے48،صحت کے18نو بلدیاتی ملازمین اور22منتخب نمائندگان کے خلاف ایکشن لیا گیا۔

خلاف ورزی کرنیوالوں میں بورڈ آف ریونیو کے14اور اوقاف کے چھ ملازمین بھی شامل ہیں، بریفنگ میں مزید بتایا گیا کہ محکمہ داخلہ کے ڈی ایس پی سمیت5اہلکاروں نے بھی خلاف ورزی کی، انتخابی ظابطے کی خلاف ورزی پر ریجنل ڈائریکٹر کالجز سکھر معطل کئے گئے، اس کے علاوہ چار ضلعی زکوۃ چیئرمینوں کو بھی برطرف کردیا گیا۔

اس موقع پر چیف سیکریٹری سندھ نے ہدایت دیتے ہوئے کہا کہ ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی پر سرکاری ملازمین کو معطل کیا جائے، الیکشن کے انعقاد تک زکوۃ چیئرمینوں کے اختیارات معطل کئے جائیں، اور معطل ملازمین کی الیکشن کے دن بھی دفاتر میں حاضری یقینی بنائی جائے ۔


خبر کے بارے میں اپنی رائے کا اظہار کمنٹس میں کریں‘مذکورہ معلومات کو زیادہ سے زیادہ لوگوں تک پہچانے کے لیے سوشل میڈیا پر شیئر کریں۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں