site
stats
پاکستان

ارکان اسمبلی اپنے اثاثوں کی اصل مالیت گول کرنے میں کامیاب

اسلام آباد : سیاست دان ایک بار پھر جُل دینےمیں کامیاب ہوگئے،اربوں روپے کی اراضی کی قیمت کوڑیوں کے مول ظاہر کرکےالیکشن کمیشن کو ماموں بنادیا۔

تفصیلات کے مطابق پراپرٹی کی قیمت گرگئی یاکروڑوں کی اراضی کوڑیوں کی ہوگئی؟ سیاستدان ایک بارپھرجُل دینےمیں کامیاب ہوگئے.

الیکشن کمیشن کوجمع کرائے گئے گوشواروں میں غریب عوام کے وزیراعظم نواز شریف کی ذاتی عالی شان رہائش گاہ جاتی امراء کے گھر کی قیمت صرف چالیس لاکھ روپے ہے۔

اپوزیشن لیڈرسید خورشید شاہ کا سکھر میں عالی شان بنگلہ بھی صرف گیارہ لاکھ روپے کا ہے۔ جبکہ سید خورشید شاہ کاسو ایکڑزمین کاٹکڑا بھی صرف پچیس لاکھ کا ہے۔

علاوہ ازیں مولانافضل الرحمان کی زیرملکیت اراضی بھی کم ازکم کاغذوں میں تو کوڑیوں کےمول بتائی گئی۔ مولانافضل الرحمان کاپانچ کنال کاپلاٹ سات لاکھ اورڈیرہ اسماعیل خان کاذاتی گھر پندرہ لاکھ روپےکا ہے۔

عوامی مسلم لیگ کےسربراہ شیخ رشید کےزمینی ٹکڑے کی قیمت بھی عوامی ہی ظاہرکی گئی ہے ۔مہنگےترین راجہ بازارمیں شیخ رشید کی دکان کی مارکیٹ ویلیوساڑھےسولہ لاکھ روپےہے۔

الیکشن کمیشن نے تفصیلات کو درست مان کرگوشوارےجاری توکردیئے لیکن سوال یہ ہےکہ کیا مقتدرادارہ ملک میں پراپرٹی کی قیمتوں سے غافل ہے؟یاپھرجان بوجھ سوال اٹھانےسے گریزکررہاہے؟

 

Print Friendly, PDF & Email
20

Comments

comments

اس ویب سائیٹ پر موجود تمام تحریری مواد کے جملہ حقوق@2018 اے آروائی نیوز کے نام محفوظ ہیں

To Top