The news is by your side.

Advertisement

سعودی عرب میں برقی سگریٹوں اور سوفٹ مشروبات پر خصوصی ٹیکس عائد

ریاض: سعودی عرب میں برقی سگریٹوں اور سوفٹ مشروبات پر خصوصی ٹیکس عائد کردی گئی، یہ ٹیکس منتخبہ محصولات کے زمرے میں آتے ہیں جو خطرناک مصنوعات پر عاید کیے جاتے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق سعودی عرب نے برقی سگریٹوں اور مشروبات پر ایک خصوصی ٹیکس عاید کردیا ہے۔ یہ 2017ء میں متعارف کردہ ایسے ہی ٹیکسوں کے مشابہ ہے۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق سعودی عرب کے محکمہ زکوٰة اور ٹیکس ( جنرل اتھارٹی برائے زکوٰة اور ٹیکس ) نے کہا کہ برقی سگریٹوں اور ان میں استعمال ہونے والی مصنوعات پر 100 فی صد محصول عاید کیا جائے گا اور چینی زدہ مشروبات پر 50 فی صد محصول عاید کیا جائے گا۔

واضح رہے کہ سعودی عرب نے پہلے ہی سگریٹوں اور تمباکو کی مصنوعات پر 100 فی صد ٹیکس عاید کررکھا ہے۔ اسی طرح قوّت بخش مشروبات پر 100 فی صد اور سوفٹ ڈرنکس پر 50 فی صد ٹیکس عاید ہے۔

محکمہ زکوٰة اور ٹیکس نے 15 مئی کو یہ ٹیکس عاید کرنے کا فیصلہ کیا تھا اور سرکاری گزٹ میں اشاعت کے بعد یہ نافذالعمل ہوگیا ہے۔ یہ ٹیکس منتخبہ محصولات کے زمرے میں آتے ہیں جو صحتِ عامہ کے لیے خطرنات مصنوعات پر عاید کیے جاتے ہیں۔

سعودی عرب دنیا میں تیل پیدا کرنے والا سب سے بڑا ملک ہے، اس نے جنوری 2018ء میں اپنے غیر تیل آمدن ذرائع میں بہتری کے لیے پانچ فی صد ویلیو ایڈڈ ٹیکس ( وی اے ٹی) متعارف کرایا تھا۔

اس کا مقصد عالمی مارکیٹ میں تیل کی قیمتوں میں کمی کے رجحان کے پیش نظر ہونے والے بجٹ خسارے پر قابو پانا تھا۔ بین الاقوامی مالیاتی فنڈ ( آئی ایم ایف) نے گذشتہ ہفتے کہا تھا کہ سعودی عرب میں وی اے ٹی متعارف کرانے کا تجربہ کامیاب رہا ہے لیکن سعودی حکومت کو اس کےنرخ بڑھانے پر غور کرنا چاہیے کیونکہ پانچ فی صد شرح عالمی معیار سے کم ہے۔

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں