The news is by your side.

Advertisement

بجلی کے نظام میں 213 ارب روپے کا نقصان صارفین سے وصول

سال 2017 میں بجلی کے نظام میں 213 ارب روپے کا نقصان صارفین سے وصول کیا گیا یعنی عوام نے بجلی کے بلوں کے ساتھ کمپنیوں کی نااہلی کا خمیازہ بھی بھگتا۔

تفصیلات کے مطابق بجلی کی تقسیم کار کمپنیوں کے غیر ذمہ دارانہ رویے کے باعث اربوں روپے کا بوجھ عوام کے سر پر ڈال دیا گیا۔

پبلک اکاؤنٹس کمیٹی کے اجلاس میں پیپکو کے چیئرمین نے اس بات کا اعتراف کیا کہ تیکنکی مسائل کے باعث گزشتہ سال 213 ارب روپےکا نقصان ہوا اور یہ ساری رقم عوام سے وصول کی گئی۔

سب سے زیادہ لائن لاسز سکھر پاور کمپنی میں ہیں۔ سپیکو میں 38 فیصد سے زائد، پشاور میں 32.6 جبکہ حیدر آباد میں 30.6 فیصد لائن لاسز ہیں۔

پیپکو کے چیئرمین کا کہنا تھا کہ بجلی کے بل کے ساتھ ساتھ صارفین کو لائن لاسز کا بوجھ بھی ادا کرنا پڑتا ہے۔


اگر آپ کو یہ خبر پسند نہیں آئی تو برائے مہربانی نیچے کمنٹس میں اپنی رائے کا اظہار کریں اور اگر آپ کو یہ مضمون پسند آیا ہے تو اسے اپنی فیس بک وال پر شیئر کریں۔

Print Friendly, PDF & Email

Comments

comments

یہ بھی پڑھیں