The news is by your side.

Advertisement

ایلون مسک کا پیوٹن کو چیلنج، جو جیت گیا یوکرین اس کا

دنیا کے امیر ترین افراد میں سے ایک اور ٹیسلا موٹرز کے مالک ایلون مسک نے روس کے صدر ولادیمیر پیوٹن کو فائٹ کے لیے چیلنج کر کے داؤ پر یوکرین کا ملک لگا دیا ہے۔

جو جیتا یوکرین اس کا، روسی صدر کو دیے گئے ایلون مسک کے اس چیلنج نے دنیا بھر میں لوگوں کو حیران کر دیا ہے، یوکرین جنگ کے خاتمے کا دنیا کے امیر ترین شخص کی جانب سے یہ ایک انوکھا لیکن انتہائی غیر سنجیدہ حل ہے۔

اسپیس ایکس کے بانی نے فائٹ کا یہ چیلنج اپنے آفیشل ٹوئٹر اکاؤنٹ کے ذریعے دیا ہے، ایلون مسک نے ٹوئٹ میں لکھا کہ یوکرین میں امن سے زیادہ کچھ قیمتی نہیں، جو جیتا یوکرین اس کا۔

ایلون مسک نے اس پیغام کو روسی زبان میں بھی ٹوئٹ کیا اور کریملن کے آفیشل ٹوئٹر اکاؤنٹ کو ٹیگ کیا ہے۔

یہ ٹوئٹ سوشل میڈیا پر وائرل ہو گئی ہے، صارفین کی جانب سے مختلف تبصرے سامنے آئے، ایک صارف نے روسی صدر اور ایلون مسک کا موازنہ کرتے ہوئے ایک خاکہ پیش کیا، اور لکھا کہ یہ چیلنج صرف 10 سیکنڈ کا ہوگا۔

یوکرین میں انٹرنیٹ منقطع، ایلون مسک کا بڑا قدم

صارف نے پیوٹن اور ایلون مسک کی عمر اور قد کی پیمائش بھی کی، لکھا کہ ایلون مسک قد میں بھی روسی صدر سے بڑے ہیں اور 19 سال چھوٹے ہونے کی وجہ سے جسمانی طاقت میں بھی زیادہ ہیں۔ دل چسپ بات یہ ہے کہ اس پر ایلون مسک نے بھی کمنٹ کیا اور صارف سے اتفاق کیا۔

واضح رہے کہ روسی حملے کے بعد یوکرین میں جب انٹرنیٹ کا نظام منقطع ہوا، تو یوکرینی وزیر کی درخواست پر ایلون مسک کی کمپنی اسپیس ایکس نے یوکرین کو انٹرنیٹ کی سہولت فراہم کی، اس سلسلے میں کمپنی نے اسٹار لنک سروس ایکٹیو کیا۔

Comments

یہ بھی پڑھیں