The news is by your side.

Advertisement

ایلون مسک کی کتنی دولت سے دنیا سے غربت کا خاتمہ ممکن ہے؟

نیویارک: اقوام متحدہ کے ایک ماہر نے کہا ہے کہ دنیا کے دولت مند ترین آدمی ایلون مسک کی صرف 2 فی صد دولت سے دنیا میں غربت کا خاتمہ ممکن ہے۔

تفصیلات کے مطابق اسپیس ایکس کے بانی اور امریکی ٹیکنالوجی کمپنی ٹیسلا کے سربراہ تنہا ہی دنیا سے مفلسی اور بھوک کا خاتمہ کر سکتے ہیں، ورلڈ فوڈ پروگرام کے ڈائریکٹر کا کہنا ہے کہ ایلون مسک کی دولت کا 2 فی صد حصہ اس دنیا کو کئی مشکلات سے نجات دینے کے لیے کافی ہوگا۔

دل چسپ بات یہ ہے کہ اس ہفتے ایلون مسک کے دنیا کے سب سے امیر آدمی بنتے ہی، کچھ لوگ ان سے اپنی دولت لے کر عالمی غربت سے لڑنے میں مدد کرنے کا مطالبہ کر رہے ہیں، کیوں کہ دنیا کے بہت سارے معاشرے اس وقت اندرونی تنازعات، موسمیاتی تبدیلی اور کرونا کے عالمی وبائی مرض کے ساتھ جوجھ رہے ہیں۔

ڈیوڈ بیزلے نے دنیا بھر میں امیر ترین افراد سے اپیل کی ہے کہ صرف ایک مرتبہ ایک ساتھ ہو کر دنیا کو بچا لیں، انھوں نے خاص طور پر ایلون مسک اور ایمازون کے مالک جیف بیزوس کا نام لیا، جو اس وقت دنیا کی امیر ترین شخصیات ہیں۔

ڈیوڈ بیزلے نے ٹوئٹر پر ایلون مسک سے اپیل کی کہ وہ صرف ایک بار 6 ارب ڈالر عطیہ کریں تو اس سے سوا 4 کروڑ لوگوں کی مدد ہو جائے گی، یہ وہ لوگ ہیں جو غذا کی درجہ بندی میں اسٹیج فور یعنی ایمرجنسی کی حالت میں ہیں، ورنہ انھیں بچایا نہیں جا سکے گا۔

بلوم برگ کے اعداد و شمار کے مطابق اس وقت ایلون مسک کی دولت 289 بلین ڈالرز سے تجاوز کر رہی ہے، اور ان کا 2 فی صد چندہ بھی دنیا بھر کے لیے کافی ہوگا۔ تاہم ایلون مسک کا اس پر کوئی رد عمل سامنے نہیں آیا بلکہ وہ اب یونیورسٹی بنانے کا سوچنے لگے ہیں۔

Comments

یہ بھی پڑھیں