The news is by your side.

Advertisement

ایمریٹس ایئر لائن کے مسافروں کیلئے اچھی خبر

یو اے ای : ایمریٹس ایئرلائن کی انتظامیہ نے کہا ہے کہ وہ کورونا وبا کے اثرات سے بحالی کی جانب گامزن ہے اور رواں برس کی دوسری ششماہی میں اس کے خسارے میں کمی آئی ہے۔

عرب نیوز کے مطابق دبئی کی ایئرلائن کو اپریل سے ستمبر تک ایک ارب 60 کروڑ ڈالر کا خسارا برداشت کرنا پڑا جبکہ 2020 میں اسی عرصے کے دوران تین ارب 40 کروڑ ڈالر کا نقصان ہوا تھا۔

کمپنی کے سی ای او شیخ احمد بن سعید المکتوم نے ایک بیان میں کہا ہے کہ ’ممالک کی جانب سے بندشیں کم کیے جانے کے بعد پورے گروپ کے کام میں بہتری آئی۔

ان کا مزید کہنا تھا کہ ’کام میں بہتری کی رفتار موسم گرما کے دوران بڑھی، موسم سرما بھی مسلسل جاری ہے اور آگے تک جائے گی۔ سال بہ سال ریونیو 86 فیصد تک بڑھا اور مسافروں کی تعداد میں 319 فیصد اضافہ ہوا۔ اسی طرح ایئرلائن نےکارگو کے میدان میں بھی وبا سے پہلے والی صورت حال کو 90 فیصد تک حاصل کر لیا ہے۔

ایئرلائن کو مالک دبئی حکومت کی جانب سے بلین ڈالر کا امدادی پیکیج بھی دیا تھا تھا۔ جون میں ایئرلائن کے پہلے سالانہ نقصان کا اعلان سامنے آیا جو تیس سال میں پہلی بار ہوا تھا کیونکہ کورونا وباکی وجہ سے کمپنی کو آپریشنز بند کرنا پڑے تھے۔

شیخ احمد کہتے ہیں ’اگرچہ مکمل طور پر بحال میں ابھی کچھ وقت باقی ہے، لیکن ہم اس کی طرف گامزن ہیں اور جلد ہی وبا سے پہلے والے حالات پر پہنچ جائیں گے۔

دوسری بڑی ایئرلائنز کی طرح ایمریٹس نے بھی ملازمین کی تعداد کم کرنے کا سلسلہ اس وقت شروع کیا تھا جب اس کے ا380 سپر جمبو اور بوئنگ 777 ایس گراؤنڈ ہوئے۔

کمپنی کی جانب سے کہا گیا ہے کہ مجموعی طور پر گروپ کی افرادی قوت دو فیصد تک کم ہو کر 73571 پر آئی لیکن اب بھرتی کی مہم ایسے ملازمین کو ترجیح دی جا رہی ہے جنہیں فارغ کیا گیا تھا۔

ستمبر کے اواخر تک ایمریٹس 139 ایئرپورٹس پر مسافر اور کارگو پروازیں آپریٹ کر رہی تھی جس کے لیے تمام بوئنگ 777 ایس اور 37 ایئر بسز اسمتعال ہو رہی ہیں جبکہ جولائی میں اس نے میامی کے لیے پروازوں کاآغاز کیا۔

ایمریٹس کے بیان میں کہا گیا ہے کہ دنیا میں جہاں بھی پابندیوں میں نرمی کی جا رہی ہے وہاں بھرپور ریونیو ریکوری سے مسافروں کی واضح طلب نظر آ رہی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں