The news is by your side.

Advertisement

شہری نے جعلی ٹریفک لائٹ گھر کے باہر لگالی، پھر کیا ہوا؟

والٹ شائر : اپنے گھر کو کاروں سے پہنچنے والے نقصان سے بچانے کیلئے ٹریفک لائٹ لگانا شہری کو مہنگا پڑ گیا، عدالت نے 75ہزار روپے جرمانہ عائد کردیا۔

انگلینڈ کے علاقے والٹ شائر میں مقیم شہری نے اپنے گھر کو نقصان سے بچانے اور مزید کسی حادثے سے روکنے کے لیے گرین ٹریفک لائٹ لگائی جو اس کیلئے پریشانی کا باعث بن گئی۔

علاقے کا 62سالہ وین ارل نامی شخص اپنے گھر کے سامنے گزرنے والی سڑک پر تیز رفتار ٹریفک سے بہت پریشان تھا اس کی پریشانی دوسری اور بڑی وجہ یہ تھی ایک بار تیز رفتار گاڑی نے اس کے گھر کی دیوار توڑ دی تھی۔

وین ارل کو خدشہ تھا کہ اس بار کوئی تیز رفتار گاڑی ان کے گھر میں گھس جائے گی چنانچہ اسے اپنے پورچ پر ایک روشن سبز بتی لگانے کا خیال آیا جو کہ قانونی طور پر ممنوع ہے۔

شہری کے اس عمل سے وہاں سے گزرنے والی گاڑیوں کے ڈرائیورز کو آنکھوں کو خیرہ کرنے والی سبز بتی سے پریشانی کا سامنا کرنا پڑ رہا تھا۔

صورتحال دیکھتے ہوئے مقامی پولیس نے جعلی گرین ٹریفک لائٹ لگانے پراس کے خلاف قانونی کارروائی کی اورعدالت میں پیش کردیا۔ والٹ شائر کی مقامی عدالت نے وین ارل پر عوامی پریشانی پھیلانے کے جرم میں پاؤنڈ332 (34،000 روپے) جرمانہ عائد کیا ہے۔

عدالت نے اسے یہ بھی حکم دیا گیا تھا کہ وہ 150پاؤنڈ (15000 روپے) لاگت میں اور £ 32 (3،200)سرچارج ادا کرے جو مجموعی طور پر2 332پاؤنڈ (پاکستانی 75ہزار روپے) بنتی ہے۔

Comments

یہ بھی پڑھیں